ترکی، مسئلہ بیت المقدس پر او آئی سی اور یورپین یونین کے باہمی سفارتی تعاون کی تجویز پیش کرے گا

0 3,305

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے واضع کیا ہے کہ ترکی اسرائیل فلسطین تنازعہ میں او آئی سی اور یورپی یونین کو مشترکہ سفارتی کوشش اور تعاون کی تجویز پیش کرے گا۔

پیرس سے وطن واپسی پر انہوں نے صحافیوں کو صدارتی جہاز میں بتایا کہ میں نے بحیثیت او آئی سی کے صدر کے مسئلہ بیت المقدس پر ایک تجویز دی ہے۔ کہ آئیں اس مسئلہ پر او آئی سی اور یورپی یونین کو اکٹھا کر کے مشترکہ کوشش کرتے ہیں۔ اس آفر کا کیا نتیجہ نکلتا ہے؟ یہ ہم دیکھیں گے۔

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے پیرس میں فرانسیسی ہم منصب ایمانوئل میکرون سے ملاقات کی اور ترکی اور فرانس کے درمیان کئی معاہدوں پر دستخط کئے گئے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت بنانے کے فیصلے پر فرانس کی طرف سے سخت ردعمل آیا تھا۔ امریکا کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے فیصلے کے بعد اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو اپنے پہلے دورے پر یورپ پہنچے جہاں پیرس میں انھوں نے فرانس کے صدر سے ملاقات کی تھی۔

فیصلہ کے بعد فرانس کے صدر ایمانوئل میکرون نے صیہونی وزیراعظم نیتن یاہو سے ملاقات کے دوران مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے سے انکار کر دیا تھا۔

یاد رہے کہ فرانس یورپی یونین کی دوسری بڑی طاقت ہے۔ جبکہ یورپ کی معاشی طور پر پانچویں بڑی قوت ہے۔ بیت المقدس پر فرانسیسی موقف اور یورپی یونین میں اس کی حیثیت کو مدنظر رکھتے ہوئے رجب طیب ایردوان نے یہ تجویز ایمانوئل میکرون کے سامنے رکھی۔

تبصرے
Loading...