ایردوان کا مقابلہ کرنے کے لیے چار اپوزیشن جماعتیں متحد

0 2,152

عبد اللہ گل کے نام پر تقسیم ہو جانے والی اپوزیشن جماعتیں بالاخر رجب طیب ایردوان کا مقابلہ کرنے کے لیے متحد ہو گئیں لیکن عبد اللہ گل کے بجائے نیا صدارتی امیدوار لایا جائے گا-

چار اپوزیشن جماعتیں 10 فیصد ووٹوں کی حد بندی کو عبور کرنے اور پارلیمنٹ میں اپنے ممبران کی تعداد بڑھانے کے لیے اتحاد پر متفق ہو گئی ہیں-

مرکزی اپوزیشن کمالسٹ جماعت "جمہوریت عوام پارٹی (CHP)، سعادت پارٹی (Saadet Parti)، اچھی پارٹی (İYİ Parti) اور ڈیموکریٹ پارٹی جون 2018ء میں ترک صدر ایردوان کے اتحاد "عوامی جمہور” کا مل کر مقابلہ کریں گی جس میں آق پارٹی (AK Parti) اور ملی حرکت پارٹی (MHP) شامل ہیں-

نئے صدارتی نظام کے تحت صدارتی امیدوار کی نامزدگی کے لیے 100000 ووٹرز یا 20 ممبران پارلیمنٹ کی تائید ضروری ہے- جبکہ پارلیمنٹ میں متناسب نمائندگی کے اصول کے تحت انتخابات میں 10 فیصد سے زائد ووٹ لینا ضروری ہیں-

گذشتہ صدارتی انتخابات میں ترک صدر رجب طیب ایردوان نے اپوزیشن کے مشترکہ امیدوار اکمل الدین احسان اولو کے 38 فیصد کے مقابلے میں 52 فیصد ووٹ حاصل کیے تھے- جبکہ گذشتہ پارلیمانی انتخابات میں آق پارٹی نے 50 فیصد، جمہوریت عوام پارٹی نے 25 فیصد، ملی حرکت پارٹی نے 12 فیصد، عوامی جمہوریت پارٹی (HDP) نے 11 فیصد، سعادت پارٹی نے 0.68 فیصد جبکہ باقی 12 چھوٹی پارٹیوں نے مجموعی طور پر 1.80 فیصد ووٹ حاصل کئے تھے-

 

تبصرے
Loading...