پاکستان، ترکی اور آزربائیجان کے شانہ بشانہ، ہماری دوستی اور بھائی چارگی قیامت تک رہے گی، سفیرِ پاکستان

0 1,729

ترکی میں پاکستان کے سفیر سیرس سجاد قاضی نے کہا ہے کہ پاکستان، ترکی اور آزربائیجان کے شانہ بشانہ رہے گا، ہماری دوستی اور بھائی چارہ قیامت تک قائم رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ بحیثیت عوام اور ریاست، ہم آذربائیجان کے شانہ بشانہ ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ترکی کی کشمیر کے مسئلے پر پاکستان کو دی گئی حمایت بہت اہم ہے۔ ‘کشمیر ہندوستان کی زیر قبضہ ہے۔ ترکی کا مؤقف باقی دنیا کے لئے ایک مثال ہے۔ اس اخلاقی مدد کی وجہ سے پاکستانی عوام ترکی اور ترک بھائیوں کے شکرگزار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ قونیا، پاکستانی عوام کے لیے ایک روحانی اہمیت رکھتا ہے۔ جلال الدین رومی کے احاطے میں واقع پاکستان اور ترکی کے مابین روحانی تعلق محمد اقبال ؒ کی علامتی قبر میں دیکھا جاسکتا ہے۔ ترکی آنے والے تمام پاکستانی، قونیا مولانا رومی کے مقبرے کی زیارت کے لئے جاتے ہیں اور سماء کی تقریب میں شرکت کرنا فرض سمجھتے ہیں۔ شاید آپ جانتے ہو کہ ملتان، پاکستان میں اولیاء کا شہر، قونیا جیسا ہی بردار شہر ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ مولانا رومی کی سر زمین سے تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں۔

سفیر پاکستان نے مزید کہا کہ آذربائیجان ہمارا برادر ملک ہے اور ہم مشترکہ اقدار اور ثقافت رکھتے ہیں۔ اس مشکل وقت میں پاکستان آذربائیجان کے شانہ بشانہ کھڑا ہے۔ پاکستان ناگورنو-کاراباخ معاملے میں آذربائیجان کے درست موقف کی حمایت جاری رکھے گا۔ ہم اپنے درمیان تجارتی اور دفاعی تعلقات کو مزید فروغ دینا چاہتے ہیں اور دونوں ممالک کو قریب لانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے واضع کرتے ہوئے پاکستان کے رضاکارانہ اکاؤنٹ ڈیفینس پی کے سے جاری ہونے والے پیغام "ایک ملت، تین ریاستیں” بارے کہا کہ یہ اشتراک تینوں ممالک میں معروف اور مقبول ہے۔ بہر حال، "ایک ملت، 3 ریاستیں” کا جملہ ان ممالک کے مابین دوستی اور بھائی چارے کی حقیقی نوعیت کی نمائندگی کرتا ہے۔

تبصرے
Loading...