انقرہ میں پاکستانی سفارت خانہ سیاحت کو فروغ کے لیے سرگرم

0 1,565

ترکی میں پاکستانی سفارت خانے نے ملک کے ثقافتی و سیاحتی طور پر پرکشش مقامات کی ترویج کے لیے ایک دستاویزی فلم کی نمائش کی۔

"امیزِنگ پاکستان” قدرتی حسن کے شاہکاروں جیسا کہ مہو ڈنڈ جھیل اور تاریخی مقامات جیسا کا دھرماراجیکا اسٹوپا پر روشنی ڈالتی ہے۔

"پاکستان تین عظیم مذاہب کا مسکن ہے اسلام، ہندو مت اور بدھ مت – اور ایک اور مذہب سکھ مت کا گہوارہ بھی،” انقرہ کے لیے پاکستان کے سفیر محمد سائرس سجاد قاضی نے خطاب کرتے ہوئے کہا۔

قاضی نے پاکستا ن کے متنوّع ثقافتی ورثے اور عظیم تاریخی، مذہبی اور روحانی پسِ منظر پر روشنی ڈالی اور کہا کہ ملک "محبت اور باہمی میل جول کے پیغام کو پھیلانے والے” درجنوں صوفیوں اور بزرگوں کے مزارات بھی رکھتا ہے۔

"پاکستان تین قدیم ترین تہذیب کا گہوارہ ہے – مہرگڑھ، وادئ سندھ اور گندھارا۔ ماہرین کا ماننا ہے کہ 7000 سال قبل مسیح سے تعلق رکھنے والا مہرگڑھ جنوبی ایشیا میں کھیتی باڑی اور گلّہ بانی کے شواہد رکھنے والے قدیم ترین مقامات میں سے ایک ہے۔”

ترک نائب وزیر ثقافت و سیاحت اوزغل اوزکان یاووز نے زور دیا کہ پاکستان کی سیاحتی صلاحیت "اس کی زبردست تاریخ اور ثقافت” میں پنہاں ہے۔

"دنیا کے بلند ترین پہاڑ اور پاکستان کے دلفریب قدرتی مناظر پاکستان کو پہاڑوں اور فطری مقامات کی سیاحت کرنے کے لیے ایک بڑا مقام بناتے ہیں۔” انہوں نے مزید کہا۔

تبصرے
Loading...