بغاوت کو ناکام بنانے والے محبِّ وطن ترکوں کو پاکستان کا خراجِ تحسین

0 1,976

پاکستان اور ترکی کے حکام نے 15 جولائی 2016ء کی ناکام بغاوت میں شہادتیں پانے والے محبِّ وطن ترکوں کو خراجِ تحسین پیش کیا ہے۔

"ہر ملک کی تاریخ میں کچھ اہم موڑ ہوتے ہیں اور 15 جولائی ترکی کی تاریخ کا ایسا ہی اہم موڑ تھا۔” ترک قونصل جنرل امیر اوزبے نے لاہور میں ہونے والی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا۔

اس تقریب کا اہتمام لاہور میں واقع ترک قونصل خانے اور یونس ایمرے انسٹیٹیوٹ (YEE) نے 15 جولائی کی ناکام بغاوت میں شہید ہونے والوں کی یاد میں کیا تھا۔

فتح اللہ ٹیررسٹ آرگنائزیشن (FETO) اور اس کے امریکا میں مقیم رہنما فتح اللہ گولن نے 15 جولائی 2016ء کو اس ناکام بغاوت کی قیادت کی تھی کہ جس میں 251 افراد شہید اور تقریباً 2200 زخمی ہوئے تھے۔

تقریب میں پنجاب کے صوبائی وزیرِ اطلاعات صمصام بخاری، سابق پاکستانی سفیر شوکت ہارون، انقرہ میں قائم حاجی بیرام ولی یونیورسٹی کی فیکلٹی آف کمیونی کیشنز کے ڈین ڈاکٹر ذاکر اوسار اور دیگر پاکستانی عہدیداروں، سفارت کاروں اور علمی شخصیات نے شرکت کی۔

"ترک افواج، پولیس اور عوام نے اپنے ملک اور جمہوریت کی حفاظت میں اپنی جانیں دیں اور باغیوں کو شکست دی۔” اوزبے نے کہا۔

انہوں نے کہا کہ FETO نے اپنے اراکین کو تعلیم، خیراتی اداروں، تجارتی یونینز اور بینکنگ کے شعبے میں داخل کیا اور وہ عطیات اور اسکول نیٹ ورک کے ذریعے چندے اکٹھے کر رہے تھے۔

"بغاوت کی کوشش کے بعد ہونے والی تحقیق میں ثابت ہوا کہ اس خون ریز بغاوت کی کوشش کے پیچھے FETO اور اس کے امریکا میں مقیم رہنما فتح اللہ گولن تھے۔”

مقررین نے 15 جولائی کی ناکام بغاوت کو انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزی قرار دیا کہ جس میں سازشی عناصر نے معصوم لوگوں کو شہید کیا۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اوسار نے کہا کہ وہ 15 جولائی کی شام انقرہ میں موجود تھے اور انہوں نے FETO دہشت گردوں کی حرکتیں اپنی آنکھوں سے دیکھیں۔ "کوئی مان نہیں سکتا تھا کہ یہ ہمارے اپنے فوجی ہیں جو ہمیں گولیاں مار رہے ہیں، اپنی پارلیمنٹ، علامتی مقامات اور دیگر اہم جگہوں پر بم پھینک رہے ہیں۔” اوسار نے کہا کہ FETO دہشت گردوں نے یہ سب کیا۔

بغاوت کی پچھلی کوششوں میں بہت کچھ کھویا تھا اور اس بار انہوں نے مخالفت کی، مزاحمت کی اور اپنے ملک کو ایک اور تباہی سے بچا لیا، اوسار نے کہا۔

پاکستانی وزیر نے بغاوت کو شکست دینے والے اور غیر جمہوری طاقتوں سے اپنے ملک کو بچانے والے ترک عوام کی سراہا۔ "میں ترک عوام کو خراجِ تحسین پیش کرتا ہوں کہ جنہوں نے اپنے ملک کے لیے قربانی دی اور اس کے مستقبل کو بچایا۔” صمصام بخاری نے کہا۔

ترکی اور پاکستان بہت اچھے تعلقات رکھتے ہیں اور دونوں ممالک ہر مشکل وقت میں ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہوتے ہیں، انہوں نے مزید کہا۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ ترکی اور اس کے عوام ہمارے دلوں میں ایک خاص مقام رکھتے ہیں اور ہمارے لیے ترکی جیسے اچھے دوست کی موجودگی باعثِ فخر ہے۔

اس موقع پر ناکام بغاوت کے بارے میں ایک مختصر فلم بھی چلائی گئی جبکہ 15 جولائی ناکام بغاوت کی وڈیوز اور تصاویر کی نمائش بھی YEE لاہور ترکش کلچرل سینٹر میں شروع ہوئی۔

تبصرے
Loading...