پاکستان اور ترکی کے مابین دہری شہریت کے معاہدے پر غور

0 364

پاکستان نے کہا ہے کہ وہ دونوں ملکوں کے شہریوں کو دہری شہریت دینے کے حوالے سے ترکی کے ساتھ ایک معاہدے پر غور کر رہا ہے۔

پاکستانی وزارتِ داخلہ نے وزیر داخلہ پاکستان اعجاز احمد شاہ اور ترک سفیر برائے اسلام آباد مصطفیٰ یرداکل کے مابین ملاقات کے بعد ایک بیان جاری کیا ہے، جس کے مطابق ترک سفیر نے اپنی حکومت کی جانب سے تجویز دی ہے کہ دونوں ملکوں کو اپنے شہریوں کو دہری شہریت فراہم کرنے کے حوالے سے ایک معاہدے پر دستخط کرنے چاہئیں۔ جس کے جواب میں وزیر داخلہ نے کہا کہ اس مسودہ پر غور کیا جا رہا ہے اور امید ہے کہ وزارت امورِ خارجہ کے ساتھ مل کر جلد کسی نتیجے پر پہنچ جائیں گے۔

اعجاز شاہ نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کے لیے ترکی کے ساتھ مشترکہ تربیتی پروگراموں اور اُن کے آلات کو جدید بنانے کے عمل کا بھی خیر مقدم کیا۔

بیان کے مطابق وزیرِ داخلہ نے لاہور کی ڈولفن فورس کی طرز پر ICT پولیس کے تعاون سے ایک پٹرولنگ فورس متعارف کروانے کے منصوبے کو بھی سراہا۔ ملاقات میں سفیر اور وزیر دونوں نے تربیتی پروگراموں کا تسلسل جاری رکھنے پر اتفاق کیا تاکہ افرادی قوت کی صلاحیتوں کو بہتر بنایا جائے۔

ترک سفیر نے وزیر کو بتایا کہ صدر رجب طیب ایردوان جلد ہی پاکستان کے دورے پر آ رہے ہیں۔ اس موقع پر ترک وزیرِ داخلہ سلیمان سوئیلو بھی پاکستان کا دورہ کریں گے اور دو طرفہ دلچسپی کے امور پر اعجاز شاہ سے تبادلہ خیال کریں گے۔

پاکستانی وزیرِ داخلہ کو بتایا گیا کہ کراچی میں زیر تعمیر ترک قونصل خانہ دنیا میں ترکی کا سب سے بڑا قونصل خانہ ہوگا۔

اعجاز شاہ نے حالیہ زلزلے میں ہونے والے جانی نقصان پر بھی ترک سفیر کے ساتھ تعزیت بھی کی۔

تبصرے
Loading...