نئے یورو نوٹ پر ترک نژاد سائنسدانوں کی تصاویر

ترک نژاد سائنسدانوں اوزلیم توریجی اور ایغور شاہین پہلی ویکسین بائیو اینڈ ٹیک تیار کی تھی

0 1,847

یورپی پارلیمنٹ کے ایک رکن نے ترک نژاد سائنسدانوں اوزلیم توریجی اور ایغور شاہین کی تصاویر یورو بینک نوٹ پر چھاپنے کی تجویز پیش کی ہے۔ ترک نژاد سائنسدانوں اوزلیم توریجی اور ایغور شاہین پہلی ویکسین بائیو اینڈ ٹیک تیار کی تھی۔

فری ڈیموکریٹک پارٹی (ایف ڈی پی) کے ایک جرمن سیاست دان مورٹز کورنر نے ویلٹ ایم سونٹاگ اخبار سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ نئے نوٹوں میں اہم یورپی شخصیات جیسے کہ شاہین اور توریجی کی تصاویر شامل ہونی چاہئیں۔ انہوں نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ویکسین تیار کرنے میں ان دونوں کی کامیابی نے لاکھوں یورپیوں کی جانیں بچائی ہیں۔

شاہین اور توریجی دونوں ترکی سے نقل مکانی کر کے 1960ء کی دہائی میں جرمنی میں نوکری کرنے والے تارکین وطن والدین کے ہاں پیدا ہوئے۔ ایغور شاہین کی عمر اس وقت 4 سال تھی جب اس کے والد 1965ء میں ایک جرمن کار فیکٹری میں کام کرنے کے لیے جرمنی آئے تھے۔

انہوں نے کولون یونیورسٹی سے طب کی تعلیم حاصل کی اور سارلینڈ یونیورسٹی میڈیکل سینٹر میں کئی سال کام کیا۔

اوزلیم توریجی ایک ترک معالج کی بیٹی ہیں، جو استنبول سے جرمنی ہجرت کر آئی تھی۔ اس نے سارلینڈ یونیورسٹی کی فیکلٹی آف میڈیسن میں میڈیسن کی تعلیم حاصل کی اور جرمنی میں کینسر امیونو تھراپی کی علمبردار بن گئیں۔

بائیو اینڈ ٹیک ویکسین وہ پہلی ویکسین تھی جسے کورونا وائرس کے مقابلے میں موثر پایا گیا۔ بائیو اینڈ ٹیک نے پی فائزر کمپنی کی مدد سے اس کی پیداوار شروع کی جس سے کورونا وائرس کی وباء کو عالمی سطح پر کنٹرول کرنے میں مدد ملی۔ ان کی تیار کردہ ویکسین کی تیسری خوراک اومیکرون قسم کو ناکارہ بناسکتی ہے۔

دوسری طرف ترکی میں بھی ایک ترک سائنسدان نے ترکوویک کے نام سے مقامی ویکسین کی تیاری مکمل کر لی ہے۔ صدر رجب طیب ایردوان نے ویکسین کی تیاری پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے اس عزم کا اظہار کیا ‏ہے کہ اسے دیگر ممالک کو عطیہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنی ویکسین پوری انسانیت کے ساتھ شیئر کرتے ہوئے خوشی ہوگی۔‏

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: