پولینڈ ترک سرمایہ کاروں کے لیے منفرد مواقع فراہم کرتا ہے، ایردوان

0 183

پولینڈ کے سرکاری دورہ کے دوران ترک صدر رجب طیب ایردوان نے ترکی-پولینڈ بزنس فورم سے خطاب کرتے ہوئے پولینڈ میں سرمایہ کاری کے مواقع پر توجہ دلائی اور کہا: "پولینڈ اپنی جغرافیایی اسٹریٹجک محل وقوع کے ساتھ ساتھ مشرق وسطی اور شمال-جنوبی تجارتی راستوں کے چوک کی حیثیت سے، یورپی یونین کی رکنیت، مستحکم معیشت اور مستحکم لیبر فورس کی وجہ سے ترک کاروباری افراد کے لئے منفرد مواقع فراہم کرتا ہے، پولینڈ ایسا ملک ہے جس کی اوسط شرح نمو تمام یورپی ممالک سے زیادہ ہے اور اس کی کشش بڑھ رہی ہے "۔

ترکی اور پولینڈ کی دوستی مضبوط ہو رہی ہے

دونوں ممالک 600 سال پر محیط دوستی سے لطف اندوز ہو رہے ہیں، ان کے درمیان کئی مشترکہ خصوصیات ہیں، صدر ایردوان نے کہا: "ہمارے باہمی تعلقات میں تمام اہم شعبے شامل ہیں جیسے سیاست، دفاع، سیکورٹی، ثقافت، آرٹ، تعلیم اور معیشت-مجھے یقین ہے کہ بحثیت دو طاقتور اور اقتصادی طور پر کامیاب قوموں کے،ہم نے مخلص دوستی مضبوط کی ہے”۔

برآمدات میں 500 بلین ڈالر کا اضافہ

ترکی کا مجموعی مقامی مصنوعات 2002ء میں 230 بلین ڈالر سے 860 بلین ڈالر تک بڑھ گئی ہیں اور اور ان کی خواہش ہے کہ 2023ء تک یہ مزید بڑھ کر 2ٹریلین ڈالر تک پہنچ جائیں، صدر ایردوان نے مزید کہا: "ہم نے فی کس قومی آمدنی 3500 ڈالر سے بڑھا کر 11000 ڈالر کر دی ہے اور اور وہ بھرپور کوشش کر رہے ہیں کہ یہ 25000 ڈالر فی کس تک پہنچ جائے”۔ انہوں نے کہا کہ  گزشتہ 15 سالوں میں ترکی کی برآمدات 153 بلین ڈالر تک پہنچ گئی ہیں، یہ گزشتہ پندرہ سالوں سے پانچ گنا بڑھتی ہوئی، اور ہم اسے 500 ارب ڈالر تک پہنچانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

ہم اپنے علاقے کے بحران میں فعال کردار ادا کر رہے ہیں

انہوں نے کہا: "ترکی کے لیے ایک طرف خطے کے بحرانوں میں کردار ادا کرنا اور دوسری طرف اپنے معاشی اہداف حاصل کرنے کے لیے آگے بڑھنا باہمی طور پر جڑے ہوئے نہیں ہیں۔ اس کےبرعکس، ترکی ان دونوں کو ایک دوسرے کے ساتھ ساتھ نبھانے کا تجربہ، وسائل اور صلاحیت رکھتا ہے”۔ انہوں نے مزید کہا کہ "اسی طرح ہم اپنے خطے کے بحران میں فعال کردار ادا کر رہے ہیں اور نئے انسانی بحرانوں کا راستہ روک رہے ہیں ہم خوش ہیں کہ ہمارے پولستانی دوست ہماری اس جدوجہد میں ہمارے ساتھ کھڑے ہیں”۔

میں اپنے کاروباری حلقے کو پولینڈ میں مزید سرمایہ کاری کی دعوت دیتا ہوں

صدر ایردوان نے کہا: "پولینڈ اپنی جغرافیایی اسٹریٹجک محل وقوع کے ساتھ ساتھ مشرق وسطی اور شمال-جنوبی تجارتی راستوں کے چوک کی حیثیت سے، یورپی یونین کی رکنیت، مستحکم معیشت اور مستحکم لیبر فورس کی وجہ سے ترک کاروباری افراد کے لئے منفرد مواقع فراہم کرتا ہے، پولینڈ ایسا ملک ہے جس کی اوسط شرح نمو تمام یورپی ممالک سے زیادہ ہے اور اس کی کشش بڑھ رہی ہے ۔ اس لیے میں اپنے کاروباری حلقے کو پولینڈ میں مزید سرمایہ کاری کی دعوت دیتا ہوں مجھے یقین ہے کہ پولینڈ کے حکام سرمایہ کاری کے لیے ہمارے سرمایہ کاروں کے ساتھ تعاون کریں گے۔میں وضاحت کے ساتھ کہہ دوں کہ بحیثیت ترک صدارت اور حکومت ہم پولینڈ میں کام کرنے والے اپنے کاروباری حلقوں کی بھرپور مدد کرتے ہیں”۔

تبصرے
Loading...