صدر ایردوان اور خاتونِ اول نے ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے دیے گئے عشائیے میں شرکت کی

0 344

صدر رجب طیب ایردوان اور خاتونِ اول امینہ ایردوان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کی جانب سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں شریک مندوبین کے اعزاز میں دیے گئے عشائیے میں شرکت کی۔

ایردوان اور ٹرمپ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 74 ویں اجلاس میں شرکت کے لیے اس ہفتے نیو یارک میں ہیں۔ دونوں رہنماؤں نے منگل کو جنرل اسمبلی سے خطاب کیا تھا۔

ایردوان اور ٹرمپ نے اتوار کو ترکی-امریکا دو طرفہ تعلقات، علاقائی حالات اور شام کے معاملے پر ٹیلی فون پر گفتگو کی تھی۔

نیو یارک روانگی سے قبل ہفتے کے روز ترک صدر نے کہا تھا کہ وہ شام کے مسئلے اور امریکا کی جانب سے دہشت گرد پیپلز پروٹیکشن یونٹس (YPG) کی مسلسل پشت پناہی کے معاملے پر صدر ٹرمپ سے بات کریں گے۔

ایردوان نے یہ بھی کہا کہ وہ ترکی کی جانب سے پیٹریاٹ میزائلوں کی ممکنہ خریداری کے بارے میں بھی امریکی صدر نے گفتگو کریں گے، جو "خارج از امکان” نہیں ہے۔

7 اگست کو ترک و امریکی عسکری حکام نے شمالی شام میں ایک سیف زون کے قیام اور بے گھر شامی باشندوں کی وطن واپسی کو آسان بنانے کے لیے ایک امن راہ داری کی تیاری پر اتفاق کیا۔ انہوں نے جوائنٹ آپریشنز سینٹر قائم کرنے پر بھی رضامندی ظاہر کی۔

معاہدہ ترکی کے سکیورٹی خدشات بشمول دہشت گرد YPG سے زون کو خالی کرانے پر غور کرے گا کہ جس کے ساتھ بسا اوقات امریکا اتحادی رہا ہے اور یہی ترکی کا اعتراض ہے۔ YPG دہشت گرد گروپ PKK کی شامی شاخ ہے کہ جو گزشتہ 30 سالوں میں ترکی میں تقریباً 40,000 لوگوں کی ہلاکت کا ذمہ دار ہے کہ جن میں خواتین، بچے اور شیر خوار بھی شامل ہیں۔

تبصرے
Loading...