صدر ایردوان کی سائنس ایوارڈز تقریب میں شرکت

0 201

صدر رجب طیب ایردوان نے استنبول میں سائنس ڈسیمی نیشن سوسائٹی کے لیے اکیڈمی ایوارڈز تقریب میں شرکت کی۔

سائنس ڈسیمی نیشن سوسائٹی اینڈ فاؤنڈیشن کے حامیوں ا ور پیروکاروں کے یکجا ہونے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے صدر ایردوان نے اعزاز یافتگان کو مبارک باد پیش کی اور سوسائٹی کی 70 سالہ طویل تاریخ کو سراہا، جس کی اب 178 شاخیں، طلبہ کے لیے 189 قیام گاہیں اور 67 تعلیمی مراکز ہیں۔

"عالمی بحران کے خلاف ترکی کی بھرپور لچک کے پس پردہ اس کا مضبوط بنیادی ڈھانچا ہے”

ترکی کے گزشتہ 19 سال کو جمہوریہ کے قیام سے بھی پہلے سے جاری ایک طویل جدوجہد کے نئے مرحلے میں تبدیلی کی علامت قرار دیتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ ہم نے اپنے ملک میں نہ صرف جمہوریت کو مضبوط کیا اور حقوق و آزادی کے معاملات کو بہتر بنایا، بلکہ ہم نے صدیوں پرانی آرزوؤں کا ادراک بھی کیا۔ اپنے اٹھائے گئے ہر قدم کے ساتھ ہم نے ظاہر کیا کہ اس ملک کے عوام اپنے ایمان، اقدار اور ثقافت کے ساتھ مادرِ وطن میں اپنے وجود کو برقرار رکھنے کے لیے کبھی استقامت کا دامن نہیں چھوڑیں گے۔ ہم نے تعلیم، صحت، تحفظ، انصاف، نقل و حمل، توانائی، شہر کاری اور کھیلوں سمیت ہر شعبے میں بنائے گئے اپنے مضبوط بنیادی ڈھانچے کے ذریعے لوگوں کو وہ معیارِ زندگی عطا کیا جس کے وہ حقدار ہیں۔ یہ مضبوط بنیادی ڈھانچا اور ساتھ ساتھ بحران کو موقع میں بدلنے کے لیے خود اعتمادی ہی عالمی بحران میں ترکی کی بھرپور لچک دکھانے کا سبب ہے۔”

ترکی کے معاشی معاملات پر روشنی ڈالتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ حکومت مہنگائی سے عوام کی زندگیوں پر پڑنے والے اثرات سے اچھی طرح آگاہ ہے۔ "ہم قیمتوں میں آنے والے عدم استحکام سے بخوبی آگاہ ہیں جو غیر ملکی زر مبادلہ میں آنے والی کمی بیشی اور غیر یقینی کیفیات کی وجہ سے ہو رہا ہے۔ لیکن ہم یہاں بھی عوام کے اسی طرح شانہ بشانہ رہیں گے جیسا کہ سازشوں، دہشت گرد تنظیموں، باغیوں اور عالمی ٹھیکیداروں کے خلاف رہے ہیں۔”

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: