صدر ایردوان کی چین کے صدر شی جن پنگ سے ملاقات

0 480

سرکاری دورے پر چین آنے والے صدر رجب طیب ایردوان کا عوامی جمہوریہ چین کے صدر شی جن پنگ کی جانب سے سرکاری تقریب میں خیر مقدم کیا گیا۔

وفود کے تعارف کے بعد ترک اور چینی قومی ترانے بجائے گئے اور صدر ایردوان نے گارڈ آف آنر کا معائنہ کیا۔

تقریب کے بعد صدر ایردوان اور صدر شی نے تنہا ملاقات کی اور ترک و چینی وفود کے اجلاس کی سربراہی بھی کی۔

"ترک-چین تعلقات کا مضبوط ہونا عالمی استحکام میں زبردست اضافہ کرے گا”

وفود کے مابین ملاقات سے قبل ایک مختصر بیان میں صدر ایردوان نے صدر شی اور چینی عوام کا مہمان نوازی پر شکریہ ادا کیا۔ حالیہ چند سالوں میں ان کے صدر شی کے مابین مختلف مواقع پر ہونے والی گفتگو کا حوالہ دیتے ہوئے صدر ایردوان نے زور دیا کہ وہ ہر شعبے میں تزویراتی اور طویل میعاد تناظر میں ترکی اور چین کے درمیان مضبوط تعلقات چاہتے ہیں۔

"میرا ماننا ہے کہ ترکی اور چین کے درمیان تعاون کو بڑھانے کے لیے کافی امکانات موجود ہیں، جو شاہراہِ ریشم کے ذریعے منسلک قدیم تہذیبوں پر مبنی ہیں اور ان کے تعلقات ہزاروں سال قدیم ہیں۔ ‘وَن چائنا’ پالیسی ترکی کے لیے تزویراتی اہمیت کی حامل ہے۔” صدر ایردوان نے کہا۔

یہ دورہ عالمی امن و استحکام کے لیے بڑھتے ہوئے چیلنجز کے دور میں ہو رہا ہے، اس جانب توجہ دلاتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "ترکی-چین تعلقات کا استحکام عالمی و علاقائی استحکام میں زبردست اضافہ کرے گا۔”

وزیر خارجہ مولود چاؤش اوغلو، وزیر توانائی و قدرتی وسائل فاتح دونمیز، وزیر خزانہ مالیات بیرات البیراک، وزیر قومی دفاع خلوصی آقار، وزیر صنعت و ٹیکنالوجی مصطفیٰ وارانک، وزیر تجارت رخسار پیک جان، وزیر ٹرانسپورٹیشن و بنیادی ڈھانچہ محمد جاہد تورخان بھی اس موقع پر موجود تھے۔

تبصرے
Loading...