ترک صدر ایردوان نے 100 روزہ منصوبہ پر عملدرآمد کے بعد دوسرا 100 روزہ منصوبہ عمل پیش کر دیا

0 640

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے پہلے 100 روزہ منصوبہ پر عملدرآمد کے بعد دوسرا 100 روزہ منصوبہِ عمل پیش کر دیا۔ دوسرا 100 روزہ منصوبہ میں 454 اقدامات شامل ہیں جن پر 24 بلین ترک لیرا (4.47بلین ڈالر) سرمایہ خرچ ہو گا۔

بیش تیپے عوامی ثقافت و کنونشن سنٹر میں دوسرے 100 روزہ منصوبہ بارے خصوصی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا، "ہم 400 اقدامات کے اپنے منصوبہ عمل پر کل 43 بلین ترک لیرا کا بجٹ بنایا تھا لیکن ہم نے وہ تمام منصوبے 37.3 بلین ترک لیرا میں مکمل کئے ہیں”۔

ترک صدر نے مزید کہا کہ وہ اپنے اقتصادی خرچوں میں مزید کمی کریں گے، پی کے کے اور فیتو کے خاتمے کے لیے کوششیں تیز کریں گے اور ان تنظیموں کا قلعہ قمع کرنے لیے نئے اقدامات اٹھائیں گے۔

صدر ایردوان نے مزید کہا کہ روس کے ساتھ ویزا کے استثنیٰ پر بات چیت کو تیز کریں گے۔

عدالتی اصلاحات بارے ترک صدر نے کہا کہ وہ پہلی بار ڈپٹی ججز اور ڈپٹی پراسکیٹرز کی آسامیاں کھولیں گے۔ جبکہ چائلڈ لیبر کے خلاف 81 صوبوں میں مہم لانچ کرنے کے لیے خصوصی یونٹس کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔ اس کے علاوہ ملک کی تمام یونیورسٹیوں میں کرئیر سنٹرز کا قیام بھی عمل میں لایا جائے گا۔

ترک صدر کے مطابق ترکی اور ایران کے باڈر پر نئی دفاعی اقدامات بھی اٹھائے جائیں گے جن میں باڈر لائٹننگ، سی سی ٹی وی کیمرے اور سیکیورٹی سینسرز شامل ہیں۔

عالمی تجارت پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ چین، ہندوستان، میکسیکو اور روس کے ساتھ قومی کرنسیوں میں تجارت بارے دو سالہ باہمی منصوبہ بندی کر چکے ہیں اور باٹر ٹریڈ بارے مزید اقدامات اٹھائیں گے۔

ترک صدر رجب طیب ایردوان جو ترکی کی تاریخ میں صدارتی نظام کے تحت پہلے صدر ہیں اس سے قبل 3 اگست 2018ء کو 1000 منصوبوں کا پہلا 100 روزہ منصوبہ عمل پیش کر چکے ہیں جبکہ دوسرے 100 روزہ منصوبہ عمل میں 400 اہم منصوبے پیش کئے گئے ہیں۔

تبصرے
Loading...