عالمی رہنما جس طرح چارلی ہیبڈو واقعہ پر اکھٹے ہوئے، اسلاموفوبیا کے خلاف بھی اسی طرح اظہار یکجہتی کریں، ترک صدارتی ترجمان

0 790

ترک صدارتی ترجمان ابراہیم قالن نے عالمی رہنماؤں پر زور دیا ہے کہ جمعہ کے روز نیوزی لینڈ کی مساجد میں نشانہ بننے والے مسلمان نمازیوں کے ساتھ بھی اسی طرح اظہار یکجہتی کریں۔ انہوں نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا، "کیا وہ (عالمی رہنما) جنہوں نے چارلی ہیبڈو واقعہ میں شکار بننے والوں کے لیے مارچ کیا، کیا قتل ہونے والے مسلمانوں کے لیے بھی مارچ کریں گے؟”۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس واقعہ پر وہی لوگ جو اس درد کو سچائی کے ساتھ محسوس کر رہے ہیں، ایک ساتھ ماتم (افسوس) کر سکتے ہیں۔ ترک صدارتی ترجمان اس واقعہ کے حوالے سے بات کر رہے تھے جب فرانسیسی کارٹون بنانے والے میگزین چارلی ہیبڈو کے دفتر پر حملہ ہوا اور 17 افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے۔ اس واقعہ کے بعد دنیا بھر سے 55 رہنماء فرانس میں اکھٹے ہوئے تھے اور مرنے والوں سے اظہار یکجہتی کیا تھا۔

تاہم یہی رہنما ترکی اور دنیا میں باقی مقامات پر دہشتگردی اور اسلامو فوبیا کے شکار ہونے والے مسلمان مقتولین سے اسی طرح کی اظہار یکجہتی کرنے میں ناکام رہے ہیں۔

نیوزی لینڈ میں ٹرینٹ نامی آسٹریلین شہری نے نماز جمعہ ادا کرتے امن پسند مسلمانوں پر ہلہ بول دیا اور اندھا دھند فائرنگ کر کے 49 نمازیوں کو شہید اور متعدد کو زخمی کر دیا۔

تبصرے
Loading...