اسد حامی ایرانی ملیشیا عفرین میں داخلے کی کوشش ترک فوج نے ناکام بنا دی، ایردوان

0 1,915

ترک صدر رجب طیب ایردوان  نے منگل کے روز اس بات کی تصدیق کی ہے کہ شام کے علاقے عفرین میں داخل ہونے کی کوشش کرنے والے بشار الاسد کے حامی دہشت گرد گروپ کو ترکی نے آرٹلری گولے بازی  سے پیچھے دھکیل دیا تھا۔

انقرہ کے صدارتی کمپلیکس میں اپنے مقدونیائی ہم منصب گیجور ایوانوف کے ساتھ ایک پریس کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا، ترکی، روس اور ایران سے عفرین کے معاملے پر اتفاق قائم کر چکا ہے اور کہا کہ یہ دہشتگرد گروپ آزادانہ حرکت کر رہا تھا۔

ایردوان نے مزید کہا، "بد قسمتی سے، اس قسم کی دہشتگرد تنظیمیں غلط اقدامات اٹھاتی ہیں جیسا کہ انہوں نے غلط فیصلہ کیا ہے”۔

قبل ازیں منگل کے روز بشار الاسد کے حامی ایرانی ملیشیا کو اسد رجیم کے علاقے میں واپش دھکیل دیا گیا تھا جو عفرین سے 10 کلومیٹر دور تھے اور پی کے کے کی شامی شاخ پی وائے کے ساتھ مل کر ترکی کے خلاف لڑنا چاہتے تھے۔

تبصرے
Loading...