صدی کا معاہدہ، قبضے کا منصوبہ ہے، بیت المقدس ہمارے لیے سرخ لائن ہے، خون دینے کے لیے تیار ہیں، ایردوان

0 2,978

ترک صدر ایردوان نے انادولو میڈیا ایوارڈز کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے امریکی ڈیل آف سنچری پر اپنا ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ "1947ء میں فلسطین کیا تھا؟ اسرائیل کیا تھا؟ اس وقت کے فلسطین سے آج کا فلسطین کتنا بدل چکا ہے۔ بے شرمی سے ڈھٹائی کے ساتھ آج دنیا کہہ رہی ہے ‘ہم فلسطین کو نئے حقوق دے رہے ہیں’۔ یہ جھوٹ بولنا بند کرو، تم کس کو دھوکہ دے رہے ہو؟ ساری زندگی تمہیں ان جھوٹ بازیوں کے ساتھ دیکھا ہے”۔

انہوں نے کہا کہ کہ تم دنیا کی قسمت کو نہیں بدل سکتے۔ فلسطین کی قسمت کو بھی نہیں بدل سکتے، میں دوبارہ کہتا ہوں کہ بیت المقدس ہمارے لیے سرخ لائن ہے۔

ترک صدر نے کہا کہ انہیں امید ہے فلسطینی بھائی اور بہنیں اپنے خون کی قیمت پر اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے اور ہم بھی خون دینے کے لیے تیار ہیں۔

تبصرے
Loading...