استنبول انتخابات کا دوبارہ انعقاد ضروری ہے، چیئرمین MHP

0 610

ملّی حرکت پارٹی (MHP) کے چیئرمین دولت باحچلی نے کہا ہے کہ 31 مارچ کو ہونے والے بلدیاتی انتخابات کا استنبول میں دوبارہ انعقاد بہت ضروری ہے اور سپریم الیکشن کونسل (YSK) حکمران عدالت و ترقی پارٹی (آق پارٹی) کی جانب سے پیش کردہ شواہد کا مکمل جائزہ لینے کی پابند ہے۔ انطالیہ میں ہونے والے ایک پارٹی اجلاس میں انہوں نے کہا کہ "سپریم الیکشن بورڈ ترکی کے مستقبل کے ساتھ نہیں کھیل سکتا۔” اتوار کو پارٹی اجلاس کے بعد انتخابات میں ہونے والی بے ضابطگیوں پر باحچلی نے کہا کہ "استنبول میں انتخابات کا دوبارہ انعقاد قومی مفاد میں ہے۔ YSK آق پارٹی کی شکایات پر مشتمل تین سوٹ کیسوں کا مکمل جائزہ لینے اور بے ضابطگیوں سے نمٹنے کا ذمہ دار ہے۔ استنبول میں جو ہوا، اسے ایسے ہی نہیں چھوڑ دینا چاہیے۔

قبل ازیں آق پارٹی نے کہا کہ اس کی باضابطہ درخواست میں انتخابات کو دوبارہ کروانے کے لیے تمام شواہد اور دستاویزات موجود ہیں۔ ان وجوہات میں میں انتخابات کے دوران غیر قانونی اور انتقال کر جانے والے ووٹرز بھی شامل ہیں جبکہ بیوک چکمجہ ضلع میں سول رجسٹری عہدیداروں نے باضابطہ طور پر ووٹرز رجسٹریشن میں بے ضابطگیاں کیں جو ضلع میں حزب اختلاف کی اہم جماعت جمہور خلق پارٹی (CHP) کے میئر حسن آق گون سے تعلق رکھتے تھے۔ پارٹی مزید کہتی ہے کہ کئی اضلاع میں رائے دہی کے لیے کمیٹیاں قانونی تقاضوں کے مطابق نہیں تھا اور بتایا کہ خالی اور غیر دستخظ شدہ ووٹنگ ریکارڈز بھی موجود تھے۔

باحچلی نے یہ بھی کہا کہ استنبول، انقرہ، ازمیر میں CHP کے غلبے کو پیپلز الائنس پر عوام کا اظہارِ عدم اعتماد نہیں سمجھنا چاہیے۔

تبصرے
Loading...