ادلب میں روسی فضائی بمباری سے 38 شہری شہید ہو گئے

0 882

شام کے شمال مغربی شہر ادلب میں جمعہ کے روز باغیوں کی رہائشی علاقے پر روسی فضائی بمباری سے 38 شہری شہید ہو گئے ہیں۔

شامی انسانی حقوق کی نگرانی کے ایک گروپ نے کہا ہے کہ جمعرات کی شام شمال مغربی ادلب صوبے کے علاقہ زردانہ پر ہونے والے حملوں کے شہداء میں 5 بچے بھی شامل تھے۔

برطانوی جنگی مانیٹرنگ گروپ کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمن نے کہا کہ، "جنگی جہاز جو غالب امکان ہے کہ روسی تھی انہوں زردانہ کے گاؤں کو رات کے وقت ٹارگٹ کیا اور مارچ کے بعد سے اب تک کسی ایک حملے میں سب سے زیادہ اموات کی وجہ بنے”۔

انہوں نے کہا کہ اموات بڑھنے کے خدشات ہیں کیونکہ 50 سے زائد شہری شدید زخمی حالت میں تھے۔ جبکہ ریسکیو ٹیموں نے ملبے سے زندہ افراد کو نکالنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔

زردانہ گاؤں میں سب سے زیادہ اپوزیشن مجاہدین کا غلبہ ہے جبکہ قلیل تعداد میں حیات تحریر الشام اتحاد کے لوگ بھی رہتے ہیں جس کی قیادت سابقہ شاملی القاعدہ رہنما کرتے ہیں۔

2011ء کے بعد حکومت مخالف مظاہروں پر بشار الاسد کے ظلم و ستم سے آغاز پکڑنے والی شامی خانہ جنگی میں اب تک 350000 افراد شہید ہو چکے ہیں۔

تبصرے
Loading...