سلجوق عہد کا نیلا مدرسہ تزئین و آرائش کے بعد کھول دیا گیا

0 1,146

وسطی ترکی کے صوبہ سیواس میں قائم 748 سال پرانا نیلا مدرسہ تزئین و آرائش کے بعد سیاحوں کے لیے کھول دیا گیا ہے۔

نیلا مدرسہ، جسے کوزہ گری کی نیلی زیبائش کی وجہ سے یہ نام ملا، 1271ء میں سلجوق سلطنت کے وزیر صاحب عطا فخر الدین علی کی ہدایت پر تعمیر کیا گیا تھا۔

مدرسہ اسلامی تعلیمی مراکز ہیں اور سلجوق ترک اور عثمانیوں کے علاقوں میں عام بنائے جاتے تھے۔

صحافیوں سے بات کرتے ہوئے ریجنل ڈائریکٹر فاؤنڈیشنز جمال قاراجا نے کہا کہ عمارت میں تزئین و آرائش کا عمل تقریباً مکمل ہے اور یہ دوپہر 3 بجے مہمانوں کے لیے کھول دی جائے گی۔

قاراجا نے کہا کہ بطور عجائب گھر استعمال کے علاوہ اس عمارت میں کانفرنس اور سیمینارز جیسی تقریبات بھی منعقد ہوں گی۔

مدرسے کی عمارت کی بحالی کا عمل ابتدائی طور پر اگست 1997ء میں استنبول ٹیکنیکل یونیورسٹی کے کلیہ تعمیرات کے چند ماہرین کی جانب سے شروع ہوا تھا، جو سلجوق عہد کی تعمیرات کی نمایاں ترین مثالوں میں سے ایک ہے۔

اناطولیہ، جس پر سلجوق ترکوں نے تقریباً 250 سال حکومت کی جو 11 ویں صدی میں شروع ہوئی، ایسی سینکڑوں عمارات کا مسکن ہے کہ جو اس عرصے کی ہیں، جن میں مساجد، مسافر خانے، تعلیمی مراکز اور کاروان سرائے شامل ہیں۔ یہ ترکی کی جانب سے تجارت، تعمیرات، مہمان داری، تعلیم، مذہب اور سماجی ریاست کو سراہنے کی نمایاں ترین علامات ہیں۔

تبصرے
Loading...