جلد ہی عفرین کے گرد گھیرا مکمل کر کے وائے پی جی کی مدد کو توڑ دیا جائے گا، ایردوان

0 451

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ آنے والے دنوں میں تیزی کے ساتھ عفرین کے گرد گھیرا مکمل کر لیا جائے گا، جس سے شہر اور علاقے کا باہر سے رابطہ ٹوٹ جائے گا۔ اس سے وائے پی جی کے لیے تمام مواقع ختم ہو جائے گے کہ وہ کسی سے مدد طلب کرے یا مذاکرات کرے۔

یہ بات انہوں نے انقرہ میں آق پارٹی کی صوبائی کانگریس سے خطاب کرتے ہوئے کہی- اس سے قبل گذشتہ دن بشار الاسد رجیم کے سرکاری خبر رساں ادارے سنا نے خبر جاری کی تھی کہ رجیم فوج سے پی کے کے کی شامی شاخ وائے پی جی کا معاہدہ ہوا ہے جس کی رو سے عفرین کو رجیم کے حوالے کیا جائے گا- 2012ء میں بغیر کسی لڑائی کے اسد رجیم نے عفرین کو اس دہشتگرد تنظیم کے حوالے کر دیا تھا-

بعد ازاں ترک سرکاری ذرائع نے واضع طور پر اسد رجیم کو متنبہ کیا کہ وہ وائے پی جی سے تعاون کرنے سے باز رہے- ترک صدر نے روسی صدر ولادیمیر پوٹن اور ایرانی صدر حسن روحانی کو فون کال کی اور ترکی کے جاری آپریشن بارے بات کی-

دوسری طرف ترک حکومت کے ترجمان اور نائب وزیر اعظم باکر بوزداگ نے کہا کہ بشار الاسد اور دہشتگرد تنظیم کے درمیان معاہدے کی خبریں غیر مصدقہ ہیں- صدارتی ترجمان ابراہیم قالن سے معاہدے کو جھوٹا پروپیگنڈا قرار دیا-

تاہم اسد رجیم نے گذشتہ ماہ ایک نام نہاد شہری قافلے کو منبج سے عفرین جانے لیے راستہ فراہم کیا تھا جس میں امریکہ کے تربیت یافتہ رقہ فورس کے نوجوانوں کی بڑی تعداد شامل تھی اور وہ ترکی کے خلاف لڑنے کے لیے عفرین جا رہے تھے-

تبصرے
Loading...