ترکی کے دو شہروں میں زلزلہ سے اموات کی تعداد 20 سے زائد، سینکڑوں زخمی

0 1,835

ترکی کے شہر ایلازا (ایلازع) اور مالاطیہ میں شب ایک تباہ کن زلزلہ نے زندگی الٹ پلٹ کر رکھ دی۔ زلزلے کی شدت 6.8 جبکہ بیس منٹ بعد دوبارہ آنے والے زلزلے کی شدت 5.9 تھی۔

آخری اطلاعات کے مطابق اس زلزلے میں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 21 سے زائد جبکہ زخمیوں کی تعداد 1000 سے تجاوز کر گئی ہے۔ جبکہ دوسری طرف ایمرجنسی کے ادارے کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ جیسے جیسے وقت گزر رہا ہے، اموات کی تعداد بڑھ رہی ہیں۔ بتایا گیا ہے ابھی تک رجسٹر کی گئی منہدم عمارتوں کی تعداد 97 ہو چکی ہے۔

زلزلے کے بعد وزیرداخلہ سلیمان سؤلو اور وزیر ماحولیات مراد کورم اور وزیر صحت فرحت الدین کوجا الازا شہر پہنچ گئے اور اپنی نگرانی میں متاثرین کی مدد کے آپریشن شروع کروا دیا۔

زلزلہ سے الازا اور مالاطیہ سمیت دیاربکر، تنجیلی، بن گول، بتلس، ماردین کے ساتھ ساتھ ادانہ، میرسین، سامسون اور نیدے جیسے شہروں میں بھی جھٹکے محسوس کئے گئے

دوسری طرف ترک صدر ایردوان نے کہا ہمارے متعلقہ ادارے الازع اور اس سے ملحقہ علاقوں میں آنے والے زلزلے سے ہمارے شہریوں کے تحفظ اور بحالی کے لیے تمام اقدامات اٹھا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے وزیر داخلہ، صحت اور ماحولیات کو علاقہ میں بھیجا ہے اور ہم اپنے شہریوں کی جان مال کے لیے کسی قسم کی سستی نہیں برتیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بطور صدر جمہوریہ ترکی، میں تمام سرگرمیوں کی خود نگرانی کروں گا۔ ہم آفاد، ریڈ کریسنٹ اور فوجی اداروں سمیت تمام اداروں کے ساتھ اپنی ملت اور شہریوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔ انہوں نے زلزلے میں جاں بحق ہونے والوں کے لیے اللہ تعالی سے رحمت جبکہ زخمیوں کے لیے جلد شفا یابی کی دعا کی۔

ترکی کے ایمرجنسی آفات اور بحالی سرگرمیوں کے لیے بنائے گئے ادارے آفاد نے اپنی پریس ریلیز میں بتایا ہے کہ انہوں نے فوری طور پر سڑکوں پر موجود شہریوں کے لیے 1689 ٹینٹ، 1656 بستر جبکہ 9 ہزار 200 کمبل ایلازا میں بھجوا دئیے ہیں۔ جبکہ گری ہوئی عمارتوں پر آپریشن ہنگامی بنیادوں پر جاری ہے اور درجنوں شہریوں کو ریسکیو کیا جا چکا ہے۔

تبصرے
Loading...