شام اور عراق میں اٹھایا جانے والا ہر قدم ترکی کے لیے بقا کا معاملہ ہے، ایردوان

0 7,826

شمال ترکی کے شہر کاستامونو میں آق پارٹی کی صوبائی کانگریس سے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کہا: "اپنے رائے کے تحفظ کے لیے شامی عوام کی جانب سے شروع کی جانے والی جدوجہد کا نتیجہ دہشتگرد تنظیموں اور ان کے حامیوں کی وجہ سے بڑے المیے کی صورت میں نکلا۔ اسی طرح کی صورتحال عراق میں واقع ہوئی۔ یہ خطہِ قدیم، وہ شہر جہاں ہمارے سچے بھائی اور بہن بستے تھے سطح زمین سے مسمار کر دئیے کر گئے۔ ہم آج بھی ادلب اور کرکوک کا درد اپنے دلوں میں واضع طور پر محسوس کرتے ہیں”۔

وہ شہر جہاں ہمارے سچے بھائی اور بہن بستے تھے سطح زمین سے مسمار کر دئیے کر گئے

گذشتہ 5، 4 سالوں میں ترکی پر ہونے والے کئی حملوں اور علاحدگی پسند دہشتگرد تنظیموں اور فیتو کی طرف استعمال کئے جانے والے کئی ٹولز، اکنامک ہٹ مین سے سماجی انتشار پھیلانے کی کوششیں، صدر ایردوان نے کہا: "الحمد للہ، ہم نے اپنی دفاعی فورسز کے ساتھ مل کر ہم نے ان سب پر قابو پا لیا ہے۔ اپنے رائے کے تحفظ کے لیے شامی عوام کی جانب سے شروع کی جانے والی جدوجہد کا نتیجہ دہشتگرد تنظیموں اور ان کے حامیوں کی وجہ سے بڑے المیے کی صورت میں نکلا۔ اسی طرح کی صورتحال عراق میں واقع ہوئی۔ یہ خطہِ قدیم، وہ شہر جہاں ہمارے سچے بھائی اور بہن بستے تھے سطح زمین سے مسمار کر دئیے کر گئے۔ ہم آج بھی ادلب اور کرکوک کا درد اپنے دلوں میں واضع طور پر محسوس کرتے ہیں”۔

ہم اپنی سرحدوں سے باہر بھی اس خطے کو محفوظ بنائیں گے

صدر ایردوان نے مزید کہا: "ہماری سرحد پر ٹیرر کوریڈور کا خطرات پیدا کئے جا رہے ہیں۔ کوئی یہ دعوی نہیں کرتا کہ سرحد کے اس پار دہشتگرد تنظیمیں طاقت رکھتی ہیں جبکہ ہم کلیس شہر کی آبادی سے زیادہ مہاجرین کو یہاں پناہ دئیے ہوئے ہیں۔ اگر شام میں سب کچھ اچھا اور ٹھیک ہے تو ہمارے یہاں 3 ملین لوگ ہماری زمینوں پر کیوں رہ رہے ہیں؟ کیوں کہ یہ مہاجرین اور ہم سرحد کے اس پار دہشتگرد تنظیموں اور رجیم کو بخوبی جانتے ہیں۔ ہم نے جس طرح سرحد کے اِس طرف داعش اور فیتو سے لوگوں کو محفوظ کیا اسی طرح سرحدوں کے اس طرف بھی خطے کو محفوظ بنائیں گے”۔

انہوں نے ہی ویزا بحران شروع کیا اور انہی نے اس کا خاتمہ کیا

ترک صدر نے امریکی منصب سے سوال کرتے ہوئے کہا: "تم کیوں دہشتگرد تنظیموں کے ساتھ تعاون کرتے ہو؟ آپ کو ہماری فضائی مدد کرنا چاہیے۔ اگر ضرورت ہوئی تو ہم دو بریگیڈ بھیجیں گے اور ہم آزاد شامی فوج کی مدد سے داعش کا خاتمہ کر دیں گے۔ ہم نے الراعی اور جرابلس میں ایسے ہی کیا ہے۔ ہم ہر جگہ ایسے کر سکتے ہیں”۔

ایردوان نے کہا کہ امریکہ نے ہی ویزا بحران شروع کیا اور انہی نے اس کا خاتمہ کر دیا۔ ہم نے اسے شروع نہیں کیا تھا اور نہ ہماری روایت ہے کہ بین الاقوامی اختلافات کا خمیازہ دو قومیں اٹھائیں۔

تبصرے
Loading...