Browsing Tag

ڈاکٹر فرقان حمید

ترک صدر ایردوان اور مسئلہ کشمیر – ڈاکٹر فرقان حمید

دیکھا جائے تو اس وقت دنیا کے بڑے مسائل مسلمانوں ہی کو درپیش ہیں اور ان مسائل کو حل کرنے کیلئے آج تک کو ئی سنجیدہ کوشش ہی نہیں کی گئی۔ عالمی مسائل کےحل کے لیے قائم ادارے ’’اقوام متحدہ‘‘ نے تو جیسے مسلمانوں کے مسائل سے منہ موڑ رکھا ہے۔…

پاکستانی "ماہر” ترک امور اور عوامی رہنما ایردوان کی جیت – ڈاکٹر فرقان حمید

ترکی کی تاریخ کے اہم ترین انتخابات جس کے نتیجے میں ترکی کا پارلیمانی نظام صدارتی نظام میں تبدیل ہو گیا ہے، اس نئے نظام کو ترک عوام میں متعا رف کروانے والے صدر ایردوان نے گزشتہ سولہ سال سے مسلسل کامیابیوںکا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ رجب…

عفرین میں لہراتا ترک پرچم – ڈاکٹر فرقان حمید

ڈاکٹر فرقان حمید پہلے پاکستانی ہیں جنہوں نے انقرہ یونیورسٹی سے ترک زبان میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ 1994ء میں وہ نہ صرف انقرہ یونیورسٹی میں ماہر زبان تعینات ہوئے بلکہ ٹی آر ٹی کی اردو سروس کے لیے ترجمان کی حیثیت سے خدمات سر انجام دینا…

ترکی ، ماضی تا حال اور پاکستان – ڈاکٹر فرقان حمید

ڈاکٹر فرقان حمید پہلے پاکستانی ہیں جنہوں نے انقرہ یونیورسٹی سے ترک زبان میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ 1994ء میں وہ نہ صرف انقرہ یونیورسٹی میں ماہر زبان تعینات ہوئے بلکہ ٹی آر ٹی کی اردو سروس کے لیے ترجمان کی حیثیت سے خدمات سر انجام…

ترکی میں یومِ یکجہتی کشمیر – ڈاکٹر فرقان حمید

ڈاکٹر فرقان حمید پہلے پاکستانی ہیں جنہوں نے انقرہ یونیورسٹی سے ترک زبان میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ 1994ء میں وہ نہ صرف انقرہ یونیورسٹی میں ماہر زبان تعینات ہوئے بلکہ ٹی آر ٹی کی اردو سروس کے لیے ترجمان کی حیثیت سے خدمات سر انجام…

ایردوان نے ٹرمپ کو دیوار سے لگا دیا – ڈاکٹر فرقان حمید

ڈاکٹر فرقان حمید پہلے پاکستانی ہیں جنہوں نے انقرہ یونیورسٹی سے ترک زبان میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ 1994ء میں وہ نہ صرف انقرہ یونیورسٹی میں ماہر زبان تعینات ہوئے بلکہ ٹی آر ٹی کی اردو سروس کے لیے ترجمان کی حیثیت سے خدمات سر انجام…

سیکولرترکی کے محافظ ادارے میں حجاب پر پابندی ختم – ڈاکٹر فرقان حمید

ڈاکٹر فرقان حمید پہلے پاکستانی ہیں جنہوں نے انقرہ یونیورسٹی سے ترک زبان میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ 1994ء میں وہ نہ صرف انقرہ یونیورسٹی میں ماہر زبان تعینات ہوئے بلکہ ٹی آر ٹی کی اردو سروس کے لیے ترجمان کی حیثیت سے خدمات سر انجام دینا…