عوام کے بھرپور تحفظ و سلامتی کو یقینی بنانے کی صلاحیت ہی کسی ریاست کو عظیم بناتی ہے، صدر ایردوان

0 156

دوسری استنبول بین الاقوامی محتسب کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ "اچھی حکمرانی کی رُوح درحقیقت عوام اور اُن کے فطری حقوق کا احترام ہے۔ کسی بھی ریاست کو اُس کی طویل سرحدیں یا مال و دولت کی فراوانی ‘عظیم’ نہیں بناتی بلکہ یہ اپنے عوام کی سلامتی، تحفظ اور خوشی کو یقینی بنانے کی صلاحیت ہے جو کسی بھی ریاست کے ‘عظیم’ ہونے کا معیار ہے۔

صدر رجب طیب ایردوان نے استنبول کے دولماباخچہ محل میں منعقدہ دوسری استنبول بین الاقوامی محتسب کانفرنس سے خطاب کیا۔

"اچھی حکمرانی کی رُوح درحقیقت عوام اور اُن کے فطری حقوق کا احترام ہے۔ کسی بھی ریاست کو اُس کی طویل سرحدیں یا مال و دولت کی فراوانی ‘عظیم’ نہیں بناتی بلکہ یہ اپنے عوام کی سلامتی، تحفظ اور خوشی کو یقینی بنانے کی صلاحیت ہے جو کسی بھی ریاست کے ‘عظیم’ ہونے کا معیار ہے۔ اچھے نظامِ حکومت کا ہر اصول ہمارے مقاصد کو پورا کرتا ہے۔ اگر عوام کی سلامتی، تحفظ اور خوشی کو خود ریاست سے خطرہ ہو، تو پھر یہ عظیم سانحہ ہے۔”

"جو ہمارے دروازے پر آیا، ہم نے اسے گلے لگایا”

صدر ایردوان نے گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ "بیشتر خانہ جنگیوں کا سبب اور مسائل، ہنگاموں میں گھری اور انسانی بحرانوں سے دوچار ریاستوں کے حالات کی خرابی کی وجہ فریب و دھوکا دہی ہے۔ ترکی نے خطے میں اُبھرنے والے انسانی بحرانوں پر دہشت گرد حملوں اور مہاجرین کی بڑی تعداد میں آمد جیسے مسائل کا سامنا کرکے قیمت ادا کی ہے۔ ترقی یافتہ ممالک کہ جن کی معیشت اور انتظامات ہم سے کہیں اچھے ہیں، انہوں نے ایسے شہریوں کے تحفظ و سلامتی کو یقینی بنانے کے بجائے اپنے دروازے اُن پر بند کر دیے۔ ہمارے انسان دوست رویّے نے یہ گوارا نہ کیا اور ہم نے اپنے دروازے پر آنے والوں کو گلے لگایا۔”

"ہم 40 لاکھ سے زیادہ مظلوم مہاجرین کو سالوں سے رہائش سے لے کر تعلیم و صحت عامہ تک کی سہولیات فراہم کر رہے ہیں،” صدر ایردوان نے مزید کہا کہ "ہم تمام دہشت گردوں کے خلاف ہیں، بشمول داعش، القاعدہ، PKK/YPG اور FETO کے، ، جو ہمارے ملک اور دنیا کو خطرے سے دوچار کر رہے ہیں۔ ترکی نہ صرف اپنی سالمیت اور امن کو یقینی بنا رہا ہے بلکہ یہ پوری بین الاقوامی برادری کا اخلاقی بوجھ بھی اٹھائے ہوئے ہے۔”

تبصرے
Loading...