صدر ایردوان اور خاتون اول کا شہداء کے خاندانوں کے ساتھ افطار

0 916

صدر رجب طیب ایردوان اور خاتون اول امینہ ایردوان نے استنبول میں افطار کے موقع پر شہداء کے اہل خانہ سے ملاقات کی۔

اس موقع پر صدر ایردوان نے کہا کہ "ہم ماہِ رمضان کا استقبال جنگ کے ایک ایسے ماحول میں کر رہے ہیں جو بحیرہ اسود کے شمال میں جاری ہے، اور جس کے سیاسی اور سماجی اثرات ترکی تک پہنچ رہے ہیں”۔

"ہم روس اور یوکرین کے درمیان جنگ کو ختم کرنے کے لیے بھرپور کوششیں کر رہے ہیں، دونوں کے ساتھ ہمارے قریبی سماجی، سیاسی، اقتصادی اور تاریخی تعلقات ہیں۔ ہم خاص طور پر امید کرتے ہیں کہ یہ جنگ، جس کے منفی اثرات ہم بھی محسوس کر رہے ہیں کیونکہ یہ توانائی سے لے کر خوراک تک بہت سے شعبوں میں عالمی تجارت کے توازن کو متاثر کرتی ہے، جلد از جلد ختم ہو جائے گی”۔

ترکی کو دنیا کی ٹاپ 10 معیشتوں میں سے ایک بنانے کے حکومتی عزم پر زور دیتے ہوئے، صدر ایردوان نے کہا: "انشاء اللہ، ترکی 2023ء کے بعد ایک غیر معمولی دور میں داخل ہو جائے گا۔ ہم اپنے شہداء اور سابق فوجیوں کا شکر ادا کرنے کا بہترین طریقہ یہ سمجھتے ہیں 2023ء کے اپنے اہداف حاصل کر لیں، اور اس کے بعد نوجوانوں کو 2053ء کے لیے اپنے وژن کی وصیت کریں”۔

ترک سوشل میڈیا کی پاکستان اور عمران خان سے بھرپوراظہاریکجہتی

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: