عروج رئیس مرمت کا کام مکمل ہونے کے بعد اپنے مشن پر واپس جائے گا، صدر ایرودان

0 149

نمازِ جمعہ کے بعد استانبول میں صحافیوں کے سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ ترکی اپنا بحری جہاز ‘عروج رئیس’ مرمت کے لیے واپس لایا ہے اور اس کا مطلب یہ نہیں کہ سیسمک (seismic) تلاش کا کام روک دیا گیا ہے۔ "مرمت کا کام مکمل ہوتے ہی عروج رئیس ایک مرتبہ پھر مشن پر واپس جائے گا اور اپنا کام وہیں سے شروع کرے گا۔”

صدر رجب طیب ایردوان نے استانبول میں نمازِ جمعہ کے بعد صحافیوں کے سوالوں کے جوابات دیے۔

"لیبیا کی گورنمنٹ آف نیشنل ایکرڈ سے مذاکرات ہو سکتے ہیں”

ایک سوال کے جواب میں کہ لیبیا کی گورنمنٹ آف نیشنل ایکرڈ کی صدارتی کونسل کے چیئرمین فیض سراج نے اعلان کیا ہے کہ وہ استعفیٰ دے دیں گے، صدر ایردوان نے کہا کہ ایسے اعلان اور ایسی پیش رفت کو سننا افسوس ناک ہے۔

اس امر پر زور دیتے ہوئے کہ لیبیا میں باغی خلیفہ حفتر جلد یا بدیر شکست سے دوچار ہوں گے، صدر ایردوان نے کہا کہ ترکی اور گورنمنٹ آف نیشنل ایکرڈ کے وفود ہو سکتا ہے اس ہفتے مذآکرات کریں اور انہوں نے امید ظاہر کی کہ مذاکرات کے بعد مسئلے کے حل کے لیے درست سمت اختیار کی جائے گی۔

"جب تک نیک نیتی موجود ہے، ہم مذاکرات کے لیے تیار ہیں”

اس سوال پر کہ آیا وہ یونان کے وزیر اعظم کیریاکوس متسوتاکس سے ملیں گے یا نہیں، صدر ایردوان نے کہا کہ ایسے کئی سربراہان مملکت یا وزرائے اعظم ہیں جو ثالث کا کردار ادا کر رہے ہیں، اور وہ انہیں بتا چکے ہیں کہ ترکی کو وزیر اعظم متسوتاکس سے بات کرنے میں کوئی مسئلہ نہیں ہے لیکن حقیقی سوال یہ ہے کہ بات کس موضوع پر ہوگی اور کس فریم ورک میں۔

اس امر پر زور دیتے ہوئے کہ عروج رئیس کو مرمت کے لیے واپس بلایا گيا تھا، صدر ایردوان نے کہا کہ "اگر ہم نے عروج رئیس کو مرمت کے لیے ہی واپس بلایا ہے، لیکن اس کا بھی مطلب ہے۔ ہم نے واپس کیوں بلایا؟ یہ ایک اہمیت کا حامل قدم ہے۔ اس کا مطلب ہے سفارت کاری کو ایک موقع دیں اور اس میں مثبت طرزِ عمل کا مظاہرہ کریں؛ یونان کو بھی اس طرزِ عمل کا مثبت سمت میں جواب دینے دیں اور مل کر اس لحاظ سے قدم اٹھائیں۔ ہم نے یہ اسی لیے کیا۔ اب عروج رئیس ساز و سامان کا گھٹتا ہوا ذخیرہ دوبارہ لادنے اور مرمت کے مرحلے میں ہے؛ لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ ہماری سیسمک تلاش ختم ہو چکی ہے۔ عروج رئیس مرمت کا کام مکمل ہوتے ہی اسی طرح دوبارہ اپنے مشن پر واپس جائے گا۔ ہم نے انہیں بتا دیا ہے کہ جب تک نیک نیتی موجود ہے، ہم مذاکرات کے لیے تیار ہیں۔ ”

تبصرے
Loading...