سرحدوں کے ساتھ بچھائے گئے دہشت گردی کے جال اور اپنی معیشت پر جاری حملے ہمیں اپنے اہداف کو حاصل کرنے سے نہیں روک سکتے، صدر ایردوان

0 425

قونیہ میں شہریوں سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "ہماری سرحدوں کے ساتھ بچھائے گئے دہشت گردی کے جال اور ہماری معیشت پر جاری حملے یا دوسری رکاوٹیں ہمیں اپنے اہداف حاصل کرنے سے نہیں روک سکتیں۔ جو ہمارے ملک پر غلبہ حاصل نہیں کر سکتے اب اپنی پوری طاقت سے ہمارے اتحاد اور یگانگت پر حملہ آور ہیں۔”

صدر رجب طیب ایردوان نے قونیہ میں شہریوں سے خطاب کیا۔

صدر ایردوان نے 2023ء میں جمہوریہ کے 100 سال مکمل ہونے پر ترکی کے اہداف کے حوالے سے اگلے چار سال کے عرصے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ "ہماری سرحدوں کے ساتھ بچھائے گئے دہشت گردی کے جال اور ہماری معیشت پر جاری حملے یا دوسری رکاوٹیں ہمیں اپنے اہداف حاصل کرنے سے نہیں روک سکتیں۔ جو ہمارے ملک پر غلبہ حاصل نہیں کر سکتے اب اپنی پوری طاقت سے ہمارے اتحاد اور یگانگت پر حملہ آور ہیں۔”

بعد ازاں صدر ایردوان نے عدالت و انصاف پارٹی (آق پارٹی) کی قونیہ شاخ کی جانب سے منعقدہ عشائیے میں شرکت کی۔ شام اور مشرقی بحیرۂ روم میں جاری معاملات کو ترکی کی بقاء کا معاملہ قرار دیتے ہوئے صدر ایردوان نے زور دیا کہ ترکی شام اور مشرقی بحیرۂ روم کے معاملات پر خاموش تماشائی نہیں بن سکتا۔ دہشت گردی کے خلاف ترکی کی جاری جنگ پر صدر ایردوان نے کہا کہ آپریشن شاخِ زیتون اور فرات شیلڈ نے ترک شہریوں کی حفاظت کے معاملات میں بڑا کردار ادا کیا ہے، اب ترکی دریائے فرات کے مشرقی کناروں پر واقع دہشت گردی کے اڈوں کے خاتمے کے لیے بھی پرعزم ہے۔

تبصرے
Loading...