تین ترک کنسورشیم، ترکی کے پہلے آکیوؤ نیوکلیئر پروجیکٹ سے سے باہر آگئیں

0 1,385

تین ترک کمپنیاں جنہوں نے ترکی کے پہلے نیوکلیئر پاور پلانٹ کی تعمیر کے لیے روسی کمپنی روستام سے شراکت کی تھی، انادولو ایجنسی کے مطابق وہ منصوبے سے باہر آ گئے ہیں۔

روسی کمپنی کے منصوبے میں 51 فیصد شئیر ہیں جبکہ بقیہ 49 فیصد شئیرز تین ترک کمپنیوں جنگیز، کولن اور کیلون میں تقسیم کیے گئے ہیں۔

تاہم کمپنیوں نے ذرائع کے مطابق کمرشل بنیادوں پر منصوبے پر عدم اتفاق کی وجہ سے تینوں کمپنیاں باہر آ گئی ہیں۔

گذشتہ سال جون میں ترک کنسورشیم نے روستام کے ساتھ ایک معاہدے کے ڈرافٹ پر دستخط کیے تھے جس کے بعد 49 فیصد شیئر ترک کمپنیوں کو دئیے جانے تھے۔

روستام، ترکی کے جنوبی صوبہ مرسین میں بحیرہ روم کے ساحل پر ملک کے پہلے نیوکلیئر پاور پلانٹ کی تعمیر کرنے کے منصوبے پر عملدرآمد کر رہی ہے۔

پلانٹ کی صلاحیت چار یونٹوں میں 4800 میگا واٹ کی پیداوار ہو گی جبکہ اس کے ورکنگ لائف 8000 گھنٹے فی سال ہو گی۔

منصوبہ کی تعمیر کا آغاز اس سال متوقع ہے۔ منصوبے کے پہلے یونٹ کے آغاز کی تاریخ 2023ء دی گئی ہے جبکہ مکمل پلانٹ 2025ء تک کام کرنا شروع کر دے گا۔

تبصرے
Loading...