سال کی پہلی شش ماہی سیاحوں نے میں ملبوسات اور جوتوں پر 1.5 ارب ڈالرز زیادہ خرچ کیے

0 263

رواں سال کے پہلے چھ مہینے میں غیر ملکی مہمانوں اور ترکی آنے والے بیرونِ ملک مقیم ترک باشندوں نے ملک میں اپنے قیام کے دوران ملبوسات اور جوتوں پر تقریباً 1.55 ارب ڈالرز خرچ کیے۔ ترک ادارہ شماریات (TurkStat) کے مطابق سیاحت سے ہونے والی آمدنی جنوری سے جون کے عرصے میں تقریباً 10 فیصد بڑھی اور 12.6 ارب ڈالرز تک پہنچی۔ جنوری-جون عرصے میں مہمانوں کی جانب سے اوسط اخراجات 649 ڈالرز فی کس رہے۔ اس عرصے میں ترکی کا دورہ کرنے والے مہمانوں نے 9.66 ارب ڈالرز ذاتی اخراجات کے طور پر خرچ کیے اور 2.94 ارب ڈالرز پیکیج ٹورز پر۔ ترکی میں بین الاقوامی سفر کی لاگت ذاتی اخراجات کا چوتھائی حصہ رہی، یعنی 2.5 ارب ڈالرز جس کے بعد 2.4 ارب ڈالرز کھانے پینے پر خرچ کیے گئے۔

2018ء کے اسی عرصے کے مقابلے میں ٹرانسپورٹیشن پر آنے والی لاگت میں کوئی فرق نہیں آیا البتہ کھانے پینے پر ہونے والے اخراجات میں 3.6 فیصد کمی آغی ہے۔

رہائش اور صحت پر اخراجات بالترتیب 1.44 ارب اور 537 ملین ڈالرز رہے۔ سیاحوں نے اسپورٹس، تعلیم اور ثقافت پر 152 ملین ڈالرز خرچ کیے اور ٹور سروسز پر 51 ملین ڈالرز سے زیادہ۔

ملبوسات اور جوتوں کا حصہ 12 فیصد رہا جو تقریباً 1.55 ارب ڈالرز تھا۔ مہمانوں نے یادگاری اشیاء پر 545 ملین ڈالرز اور قالینوں پر 52 ملین ڈالرز خرچ کیے۔ مرینا سروسز پر خرچ بڑھتے ہوئے 21 ملین ڈالرز تک پہنچا، جبکہ دیگر اخراجات 404 ملین ڈالرز رہے۔

2.1 ارب ڈالرز مقامی سیاحوں نے خرچ کیے

دوسری جانب ملک میں رہنے والے اور دیگر ممالک کو جانے والے افراد کے سیاحتی اخراجات میں سال کے ابتدائی چھ ماہ میں 21 فیصد کمی آئی۔

ذاتی اخراجات اور پیکیج ٹور بالترتیب تقریباً 1.87 ارب اور 282 ملین ڈالرز کے رہے۔

بیرون ملک جانے والے ترک باشندوں کے ذاتی تین چوتھائی اخراجات کھانے پینے، رہائش اور ٹرانسپورٹ پر مشتمل رہے جو بالترتیب 575 ملین، 557 ملین اور 219 ملین ڈالرز رہے جبکہ 117 ملین ڈالرز یادگاری اشیاء پر بھی خرچ کیے گئے۔

دریں اثناء وزارت ثقافت و سیاحت نے گزشتہ ہفتے یہ بھی اعلان کیا تھا کہ ترکی آنے والے غیر ملکی سیاحوں کی تعداد میں جنوری سے جون کے دوران سالانہ بنیادوں پر 13.2 فیصد اضافہ ہوا۔

جنوری سے جون کے درمیان 18 ملین سے زیادہ غیر ملکی سیاح ترکی میں داخل ہوئے۔ اگر بیرون ملک مقیم ترک شہریوں کی ملک آمد کو بھی شامل کیا جائے تو یہ تعداد 21.15 ملین تک جا پہنچتی ہے جو سال بہ سال میں 11.81 فیصد اضافہ ہے۔

بیرون ملک مقیم 30 لاکھ سے زیادہ ترک شہریوں نے سال کے ابتدائی چھ مہینوں میں ملک کا دورہ کیا، جو 2018ء کے اسی عرصے کے مقابلے میں 4.27 فیصد زیادہ ہے۔

گزشتہ سال ملک میں 39.5 ملین غیر ملکی داخل ہوئے تھے جو 2017ء کے 32.4 ملین کے مقابلے میں کہیں زیادہ تھے۔

تبصرے
Loading...