شمالی قبرص کا جھنڈا: ترکوں کی طرف سے صہیونی عزائم کا تاریخ ساز جواب

0 1,941

اسرائیل کی قابض ریاست جہاں صہیونیوں کی اکثریت آباد ہے اس کی نمائندگی کرنے والا جھنڈا "گریٹر اسرائیل” کے عزائم کا واضع اشارہ کرتا ہے جسے وہ زبور کی روایتوں کی مدد زندہ رکھے ہوئے ہیں-

اسرائیلی جھنڈے کے وسط میں نیلا "داؤد کا تارہ” موجود ہے جو یہودی ہونے کی عکاسی کرتا ہے جبکہ دو طرفہ نیلی دھاریاں دریائے فرات اور دریائے نیل کی علامت ہیں- صہیونیوں کا عزم ہے کہ وہ نیل سے فرات کے درمیان "گریٹر اسرائیل” قائم کریں گے-

شمالی قبرص کی ریاست جس نے 1974ء میں آزاد ریاست کا اعلان کیا- اسے ترکی نے تسلیم کیا بلکہ معاشی طور پر بھرپور مدد کی-

شمالی قبرص کے جھنڈا معروف اسلام پسند رہنماء نجم الدین اربکان نے ڈیزائن کیا تھا جس میں دو سرخ دھاریوں کے درمیان سرخ ہلال کا نشان ہے- ہلال کا نشان اسلام کی علامت ہے جبکہ سرخ ریاست عثمانیہ کی نمائندگی کرتا ہے- دو دھاریاں اسرائیلی جھنڈے کی طرح دریائے فرات اور دریائے نیل کی علامتیں ہیں-

شمالی قبرص کا جھنڈا اس بات کا اظہار ہے کہ دریائے فرات سے نیل تک ریاست عثمانیہ کی اکائیاں پیدا ہوں گی اور ایک بار پھر سلطنت عثمانیہ قائم ہو گی-

تبصرے
Loading...