ترک میڈیا میں پاکستان کے خلاف کوئی چیز نہیں چھپ سکتی، علی شاہین نے سچ کر دکھایا

0 5,822

ترک ریڈیو اینڈ ٹیلی ویژن کارپوریشن کے چینل TRT World پر چھاپی گئی اسٹوری کا نوٹس لیتے ہوئے ترک پارلیمنٹ میں آق پارٹی کے ممبر علی شاہین نے ٹی آر ٹی سے فوری طور پر ریموو کروا دیا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ترکی میں رہنے والے حاد اکمل نے ان کی توجہ TRT World کی اس اسٹوری کی جانب مبذول کروائی جس میں ترکی کی طرف سے دنیا کو بھیجی جانے والی امداد اور تعاون کا جائزہ لیا گیا تھا۔ اسٹوری میں استعمال کئے گئے نقشے میں کشمیر کو پاکستان کے بجائے ہندوستان کا حصہ ظاہر کیا گیا تھا۔

ترک پارلیمنٹ کے اردو جاننے والے واحد رکن علی شاہین نے اس پر معذرت کرتے ہوئے فوری طور پر ٹی آر ٹی کے اعلیٰ عہدیداروں سے رابطہ کیا جس کے فوری بعد اس اسٹوری کو ڈیلیٹ کر دیا گیا۔

ترک پارلیمانی ممبر اس سے قبل یہ کہہ چکے ہیں کہ ترک میڈیا میں پاکستان کے خلاف کوئی خبر نہیں چھپ سکتی ہے۔ اس ضمن میں انہوں نے یہ بھی کہا کہ پاکستان کے مفادات کے خلاف چھپنے والی بعض خبروں اور تجزیوں نے ان کو ہمیشہ بے چین کیا ہے۔

تبصرے
Loading...