ترک حکومت نے استنبول کے تاریخی چرچ کو بحال کر کے کھول دیا

0 224

ترک ڈائریکٹوریٹ جنرل آف فاؤنڈیشنز نے اتوار کے روز آیا یورگی چرچ کی حالت کو بہتر کر کے دوبارہ کھول دیا ہے۔ تقریب میں استنبول کی مسیحی کمیونٹی کی اہم شخصیات نے بھی شرکت کی۔ یہ چرچ 1836ء میں اس جگہ پر دوبارہ تعمیر کیا گیا تھا جہاں اسے 1726ء میں آگے لگنے سے تباہ ہو گیا تھا۔ اس کے ساتھ منسلک اسکول بیواولو محبانِ میوزک ایسوسی ایشن جو 1953 ء میں تخلیق کی گئی کے زیر اہتمام چلایا جاتا ہے۔ تقریب کے موقع پر ایسویسی ایشن نے ایک کنسرٹ کا بھی اہتمام کر رکھا تھا۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مسیحی کمیونٹی کے پیٹرآرک براتھولومیو نے کہا کہ یہ سماجی ذمہ داری تھی کہ شہر کی پرانی عمارات کو بحال کیا جائے۔ انہوں نے چرچ کی بحالی کا کام کرنے پر ترک صدر رجب طیب ایردوان اور آق پارٹی کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا، "ہمارا مختلف مذاہب رکھنا اس ملک کی دولت ہے اور اس کے ساتھ ہم آگے بڑھتے ہیں”۔

اس موقع پر ڈائریکٹوریٹ کے سربراہ نے بتایا کہ ہم تمام ثقافتی اثاثوں کو محفوظ بنا رہے ہیں جن میں مساجد بھی ہیں، کنیسا بھی اور چرچ بھی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ ہماری پالیسی ہے کہ ماضی کی عظیم عمارتوں کو  چاہے اس کا تعلق اسلام سے ہو یا دوسرے مذاہب سے ہم انہیں بحال کریں۔ میں پیٹرآرک کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے یہاں پادری کی تعیناتی کر دی ہے تاکہ چرچ باقاعدہ کام کرنا شروع کر دے۔ یہ تعیناتی اس کی بحالی کا حصہ ہے۔

تقریب میں شریک یونانی مسیحی کمیونٹی مسرت کا اظہار کر رہی تھے اور چرچ کی بحالی پر پرجوش نظر آ رہے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ ایک کامیاب بحالی ہے کیونکہ بحالی کے تمام مراحل پیٹرآرک کی زیر نگرانی کیے گئے ہیں۔

 

تبصرے
Loading...