ترکی کرپٹو مارکیٹ کو محفوظ مالیاتی بنیادیں فراہم کرے گا

0 1,399

حکمران جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی (آق پارٹی) کے ڈپٹی پارلیمانی گروپ لیڈر مصطفیٰ ایلی تاش نے ان الزامات کی تردید کی ہے کہ کرپٹو کرنسی کے منافع پر 40 فیصد ٹیکس عائد کیا جائے گا۔

آق پارٹی کی جانب سے مقامی کریپٹو کرنسی ایکسچینج پلیٹ فارمز کو ریگولیٹ کرنے کے لیے ایک قانون بنانے کی تجویز اگلے ہفتوں میں ترک پارلیمنٹ میں پیش کی جائے گی۔

ایلی تاش نے ٹویٹ کیا تھا، کہ نئے قانون کا مقصد "[مقامی کرپٹو کرنسی] سسٹم کو ریگولیٹ کرنا، بدنیتی پر مبنی کارروائیوں کو روکنا، سرمایہ کاروں کی حفاظت کرنا اور شکایات کے ازالے کا نظام قائم کرنا ہے۔”

میڈیا رپورٹس میں زیر بحث متعدد مسودہ جات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے، ایلی تاش نے کہا، "ہر فرد یا ادارہ ایک مسودہ تیار کر سکتا ہے، لیکن وہی مسودہ قانون کا درجہ حاصل کرے گا جسے پارلیمان میں پیش کیا جائے گا اور اسی پر ہی حتمی رائے دی جائے گی۔”

ڈالر کا استعماری نظام اور ترک حکومت کی استقامت – سید سعادت اللہ حسینی

ایلی تاش  نے 29 دسمبر 2021 کو ترکی میں کام کرنے والے کریپٹو کرنسی پلیٹ فارمز کے 13 نمائندوں کو پارلیمنٹ میں مدعو کیا تھا۔ وزارت خزانہ اور مالیات، بینکنگ ریگولیشن اینڈ سپرویژن ایجنسی (BDDK)، مالیاتی جرائم کے تحقیقاتی بورڈ (MASAK) اور ترکی کے سینئر حکام کے علاوہ مرکزی بینک کے نمائندے نے بھی اس اجلاس میں شرکت کی تھی۔

اس اجلاس کے بعد انہوں نے کہا تھا کہ وہ ایک ایسے فریم ورک کے تحت قانون کا متن تیار کریں گے جس میں تیزی سے بدلتے ہوئے ماحول کے ساتھ رہنما خطوط پر فوری ترامیم کی بھی گنجائش موجود ہو۔

آق پارٹی کے تھنک ٹینک، قانون سازی میں اپنی تجاویز پیش کرنے کے لیے برطانیہ، ریاست متحدہ ہائے امریکہ اور جاپان میں کرپٹو کرنسی سے متعلق قواعد و ضوابط کا بھی گہرائی سے مطالعہ کر رہے ہیں۔

 

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: