ترک ادارے روکتسان نے ڈرونز کے لیے ڈائریکٹڈ-اِنرجی ویپن الکا کی رونمائی کردی

0 1,519

ترک دفاعی ادارے روکتسان (Roketsan) نے پہلے مقامی طور پر تیار کردہ ڈائریکٹڈ-اِنرجی ویپن (DEW) الکا (Alka) کی رونمائی کردی ہے کہ جو کسی بھی حملہ آور ڈرون کو تباہ کرسکتا ہے یا اسے ناکارہ بنا سکتا ہے۔

روکتسان نے بین الاقوامی دفاعی صنعتی میلے (IDEF’19) میں الکا متعارف کرواتے ہوئے کہا کہ یہ ویپن سسٹم ڈرون حملوں کے ذریعے ترک مسلح افواج کو نشانہ بنانے کے واقعات میں حالیہ اضافے کے بعد تیار کیا گیا ہے۔ روکتسان کے عہدیدار پروفیسر اوغر کیاسال کے مطابق الکا لیزر اور الیکٹرومیگنیٹک سسٹمز سے لیس ہے تاکہ ڈرونز اور اس سے ملتے جلتے ہوائی جہازوں کو تباہ کر سکے یا ناکارہ بنا سکے۔ کیاسال نے کہا کہ سسٹم اپنے آن بورڈ ریڈار اور الیکٹرو-آپٹکس کی مدد سے متعدد اہداف کو ٹریک کر سکتا ہے۔

دنیا بھر میں دہشت گرد حملوں کے لیے ڈرونز پر بم نصب کر رہے ہیں یا انہیں کیمروں سے لیس کرکے اپنے اہداف کی جاسوسی کرتے پائے گئے ہیں۔ "روایتی ہتھیاروں یا بموں کے ذریعے ڈرونز کو نشانہ بنانا بہت مشکل ہے۔ آپ کو نئے خطرات کے مقابلے میں جدید طریقے اپنانے ہوں گے۔ ہم نے دنیا میں اپنی نوعیت کا ایسا پہلا سسٹم تیار کرنے کا ارادہ کیا۔”کیاسال نے کہا۔

ہتھیار کو مکمل کرنے میں پانچ سال لگے، جس میں روکتسان نے آخری دو سال الکا کو پورٹیبل سسٹم بنانے میں لگائے تاکہ ایک مخصوص ٹرک کے ساتھ نقل و حرکت کی جا سکے۔ "اب یہ ٹرک کے پیچھے موبائل سسٹم کے طور پر یا کسی ٹاور کے اوپر فکس کرکے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ یہ سسٹم زبردست صلاحیت رکھتا ہے۔” کیاسال نے کہا۔ "ہمارا مقصداپنے موبائل ورژن کے ساتھ فوجیوں اور آپریشنز کا تحفظ کرنا ہے، جبکہ فکسڈ سسٹم ہیڈکوارٹرز، فوجی اڈوں، بحری جہازوں اور دیگر اسٹریٹجک مقامات کے لیے زیادہ موزوں ہے۔”

الکا 4 کلومیٹرز تک کے علاقے میں ڈرونز کے کسی بھی جھنڈ کو نشانہ بنا سکتا ہے اور 500 میٹرز (1600فٹ) کے فاصلےپر ڈرونز کو دھماکا خیز مواد سے اڑا سکتا ہے۔

یہ سسٹم focused laserیا electromagnetic beams کا استعمال کرکے محفوظ فاصلے سے کسی ڈرون کو تباہ یا ناکارہ بنا سکتا ہے۔ یہ دن اور رات میں کسی بھی وقت خطرات کو بے اثر کر سکتا ہے اور اس کے استعمال کی لاگت بھی روایتی ہتھیاروں کے مقابلے میں بہت کم ہے۔

کیاسال کے مطابق الکا نے بہترین ابتدائی نتائج دیے ہیں اور ایک الکا پہلے ہی روکتسان کی تنصیب کی حفاظت کے لیے نصب کیا جا چکا ہے۔

تبصرے
Loading...