ترکی انصاف کے میدان کے بہتر دور میں داخل ہو رہا ہے، ایردوان

0 827

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے آئینی کورٹ کی 56 ویں سالگرہ کے موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا، "نئے نظام حکومت کے تحت ایگزیکٹو شاخ کو مضبوط، مقننہ کو زیادہ معروف اور عدلیہ کو زیادہ آزاد بنانا ہمارا عزم ہے۔ جو 24 جون کے انتخابات کے بعد لاگو ہو جائے گا”۔

ہمیں انصاف کے لیے انسانیت کی پکار کو سننا چاہیے

یہ کہتے ہوئے کہ یہ تمام انسانوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ ماضی کے پرانے اور اندھیر راستوں پر جاتی باقی دنیا، ممالک اور معاشروں کا انتظار کئے بغیر انصاف کے لیے انسانیت کی پکار کو سنیں۔ صدر ایردوان نے بتایا، "یہ حقیقت ہے کہ مشرق وسطیٰ سے جنوبی ایشیا اور افریقہ سے جنوبی امریکہ تک ہر جگہ مظلوموں کی چیخ و پکار پہنچتی ہے جو عدل کے مسائل پر سوالیہ نشان ہے۔ اور یہ بھی ایک حقیقت پے کہ 3۔5 ملین لوگ جو شام میں اپنے گھروں سے بے گھر ہوئے ترکی میں سیکیورٹی اور امن کے ساتھ 7 سال سے رہ رہے ہیں”۔

ترک صدر نے کہا کہ وہ ورلڈ آرڈر جس میں وہ ترکی کی لاکھوں مہاجرین کی خدمات میں مدد کرنے کے بجائے بلین ڈالرز دہشتگردوں پر وار دیتے ہیں وہ ورلڈ آرڈر انصاف پر مبنی نہیں ہے بلکہ جبر پر مبنی ہے۔

ہم نے بہت سے خطرات کو سنبھالا اور ان پر قابو پایا ہے

صدر ایردوان نے مزید کہا، "ہم نے جمہوریت اور آئین سے اپنے عزم بارے کوئی سمجھوتہ کئے بغیر کٹھ پتلیوں سے بغاوت کی کوششوں اور دہشتگردوں کے حملوں تک کئی خطرات کو سنبھالا اور قابو کیا ہے۔ ایک امر حقیقت کے تحت ہم نے خطرات کو صرف ختم ہی نہیں کیا بلکہ پر امن طریقے سے بہت ہی اہم نظام حکومت کو بدلنے کی طرف بھی جا رہے ہیں۔ نئے نظام حکومت کے تحت ایگزیکٹو شاخ کو مضبوط، مقننہ کو زیادہ معروف اور عدلیہ کو زیادہ آزاد بنانا ہمارا عزم ہے۔ جو 24 جون کے انتخابات کے بعد لاگو ہو جائے گا”۔

تبصرے
Loading...