علاقائی تحفظ کے لیے ترکی اور یورپی یونین کے مذاکرات کلیدی کردار رکھتے ہیں: صدر یورپی کونسل

0 876

یورپی کونسل کے صدر چارلیس مائیکل نے کہا ہے کہ ترکی اور یورپین یونین کے درمیان مذاکرات علاقائی استحکام اور سیکیورٹی کے لیے کلیدی کردار رکھتے ہیں۔ اس سے قبل مائیکل اور صدر رجب طیب ایردوان جی 20 سمٹ کے دوران روم میں ملاقات کر چکے ہیں جہاں انہوں نے دو طرفہ تعلقات اور علاقائی مسائل پر بات کی تھی۔

مائیکل نے صدر ایردوان سے ملاقات کے بعد ٹویٹ کی تھی کہ "افغانستان، لیبیا اور وسیع خطے پر ہونے والی پیش رفت کر بات چیت”۔

ترکی اور یورپی یونین کے تعلقات میں مشرقی بحیرہ روم میں کشیدگی، شام میں ترکی کے کردار، تارکین وطن کے بحران اور بلاک میں شامل ہونے کے لیے ترکی کے الحاق کے عمل میں تعطل سمیت کئی مسائل پر تنازعات موجود ہیں۔

ترکی، یورپی یونین کے ساتھ طویل ترین تاریخ پر سب سے طویل مذاکراتی عمل رکھتا ہے۔ ترکی نے 1964ء میں یورپی یونین کے پیشرو فورم یورپی اقتصادی برادری (EEC) کے ساتھ ایسوسی ایشن کے معاہدے پر دستخط کیے تھے، جسے عام طور پر امیدوار بننے کے لیے پہلا قدم سمجھا جاتا تھا۔ 1987ء میں سرکاری امیدواری کے لیے درخواست دی گئی، ترکی کو امیدوار ملک کا درجہ ملنے کے لیے 1999ء تک انتظار کرنا پڑا۔ تاہم، مذاکرات کے آغاز کے لیے، ترکی کو 2005ء تک مزید چھ سال انتظار کرنا پڑا، جو دوسرے امیدواروں کے مقابلے میں ایک منفرد طور پر طویل عمل تھا۔

ترکی قومی آمدنی کے لحاظ سے سب سے زیادہ انسانی امداد دینے والے ملکوں میں سے ایک ہے، صدر ایردوان

صدر ایردوان نے جی 20 کے دوران دیگر یورپی یونین کے دیگر اہم ممبر ممالک فرانس اور جرمنی کے سربراہان مملکت سے بھی ملاقاتیں کیں۔

صدر ایردوان نے فرانسیسی ہم منصب ایمانوئل میکرون سے لانوولا کنونشن سنٹر میں 50 منٹ کی بند کمرے کی میٹنگ کی، جہاں اٹلی2021ء کے جی 20 سربراہی اجلاس کی میزبانی کر رہا ہے۔ یہ کورونا وائرس وباء کے بعد پہلی براہِ راست ون آن ون ملاقات تھی۔

اس کے علاوہ ترک صدر ایردوان نے جرمن چانسلر انجیلا مرکل سے بھی 30 منٹ بند کمرے میں ملاقات کی۔ جرمنی کے آئندہ وائس چانسلر اولاف شولس بھی اس ملاقات میں موجود تھے۔

تبصرے
Loading...