ترکی مشکل دور کو پیچھے چھوڑتے ہوئے اب نئے مرحلے میں داخل ہو چکا ہے، صدر ایردوان

0 150

آق پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی سے بذریعہ وڈیو کانفرنس خطاب کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "ترکی ترقی یافتہ ممالک سے زیادہ مستحکم اقدامات اٹھا کر اب ایک نئے مرحلے میں داخل ہو چکا ہے، جس میں وہ اس مشکل دور کو پیچھے چھوڑ دے گا۔ ہمارے سامنے موجود مستقبل کا منظرنامہ ہمیں بحیثیت عوام اور ریاست زیادہ خود اعتمادی بخشتا ہے۔ ہم وباء کے ان ایام میں حاصل کردہ کامیابیوں کو علاقائی و عالمی دونوں سطح پر مزید کامیابیوں میں تبدیل کریں گے۔”

صدر اور چیئرمین آق پارٹی رجب طیب ایردوان نے انصاف و عدالت (آق) پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس سے بذریعہ وڈیو کانفرنس خطاب کیا۔

صدارتی کابینہ کے گزشتہ اجلاس میں ہونے والے فیصلوں پر بروقت اقدامات اٹھانے کی تلقین کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ ترکی عوام کی ضروریات اور متعلقہ اداروں کی رائے کے مطابق معاملات کو تندہی سے سنبھالے گا۔

"ہم اپنے ملک کو اس وبائی آفت سے چھٹکارا دِلا کر رہیں گے”

ہر ممکن پہلو سے جامع غور وفکر کے بعد ہی حالات کو معمول پر لانے کے لیے اقدامات اٹھانے پر زور دیتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ ابھی تک جو پیش رفت ہو چکی ہے، اسے کبھی متاثر نہیں ہونے دیں گے۔

صورتِ حال کے پیش نظر حالات کو معمول پر لانے کے لیے طے کیے گئے اوقاتِ کار میں ہو سکتا ہے کچھ تبدیلیاں کی جائیں، اس پر بات کرتے ہوئے صدر نے کہا کہ "ترکی اور دنیا بھر میں ہونے والے واقعات کے پیشِ نظر ہم اپنے منصوبوں کو اسی لحاظ سے بہتر بناتے رہیں گے، جو ہم نے نائب صدر کے تعاون سے ترتیب دیے ہیں۔ ہم اپنے ملک کو اس وبائی آفت سے چھٹکارا دلا کر رہیں گے، نہ ہی نااُمیدی ہوں گے اور نہ ہی بے جا امیدیں باندھیں گے۔”

صدر ایردوان نے کہا کہ "ترکی ترقی یافتہ ممالک سے زیادہ مستحکم اقدامات اٹھا کر اب ایک نئے مرحلے میں داخل ہو چکا ہے، جس میں وہ اس مشکل دور کو پیچھے چھوڑ دے گا۔ ہمارے سامنے موجود مستقبل کا منظرنامہ ہمیں بحیثیت عوام اور ریاست زیادہ خود اعتمادی بخشتا ہے۔ ہم وباء کے ان ایام میں حاصل کردہ کامیابیوں کو علاقائی و عالمی دونوں سطح پر مزید کامیابیوں میں تبدیل کریں گے۔”

تبصرے
Loading...