ترکی اس مقام پر پہنچ چکا ہے جہاں یہ خطے اور دنیا میں توازن پیدا کر سکتا ہے، صدر ایردوان

0 121

دوزجہ، چوروم، اماسیہ، بارتین اور قارابوق میں آق پارٹی کی ساتويں عمومی صوبائی کانگریسز سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "تمام تر غداریوں، حملوں اور بچھائے گئے جالوں کے باوجود ترکی آج اس مقام پر پہنچ چکا ہے جہاں وہ اپنے خطے اور دنیا میں توازن پیدا کر سکتا ہے۔”

صدر رجب طیب ایردوان نے دوزجہ، چوروم، اماسیہ، بارتین اور قارابوق میں آق پارٹی کی ساتويں عمومی صوبائی کانگریسز سے بذریعہ وڈیو کانفرنس خطاب کیا۔

ترکی پر دہشت گرد حملوں اور FETO کی جانب سے بغاوت کی کوشش کو یاد کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "تمام تر غداریوں، حملوں اور بچھائے گئے جالوں کے باوجود ترکی آج اس مقام پر پہنچ چکا ہے جہاں وہ اپنے خطے اور دنیا میں توازن پیدا کر سکتا ہے۔”

"ترکی ہر اس مسئلے کا رُخ بدل سکتا ہے، جس کا وہ فریق ہے”

صدر ایردوان نے کہا کہ "ہر بحران جو جنم لیتا ہے، ہر سانحہ جو ہمیں پہنچتا ہے، اور ہر منصوبہ جو ہم شروع کرتے ہیں ہماری طاقت، حجم اور ہمارے بنائے گئے بنیادی ڈھانچے کے فوائد کو ظاہر کرتا ہے۔ وبائی بحران نے ہمارے طبّی انفرا اسٹرکچر کی مضبوطی کو، زلزلوں نے ہمارے ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے انفرا اسٹرکچر، وبائی اقدامات نے ہمارے پیداوار اور رسد کے انفرا اسٹرکچر اور ہمارے تعلیمی ٹیکنالوجی کے بنیادی ڈھانچے کی طاقت کو ظاہر کیا ہے۔ ہر معقول شخص جو صاف نیت رکھتا ہے سکیورٹی سے لے کر سفارت کاری تک ہر شعبے میں ترکی کی پیشرفت کو دیکھ سکتا ہے۔ ہمارا ملک اپنی سرحدوں کے اندر دہشت گردوں سے لڑنے میں مشکلات سے دوچار تھا۔ البتہ ہم اب ایسا ملک بن چکے ہیں جو بیک وقت تقریباً نصف درجن سرحد پار آپریشنز کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ بین الاقوامی اکھاڑے میں ہمارے الفاظ پر کان نہیں دھرے جاتے تھے، ہمارے مطالبات کو نظر انداز کیا جاتا تھا، ہمارے حقوق مسلسل پامال کیے جاتے تھے۔ لیکن آج ترکی ایسا ملک بن چکا ہے جو ہر اس معاملے کا رُخ تک تبدیل کر سکتا ہے کہ جس کا وہ فریق ہے۔ یہ ہے پس منظر جس کی بنیاد پر ترکی عالمی سیاسی و معاشی نظام میں ایک نمایاں اور ابھرتی ہوئی طاقت تسلیم کیا جاتا ہے کہ جو وباء کے بعد نئے دور کی تشکیلِ نو کرے گا۔”

تبصرے
Loading...