ترکی اس خطے اور دنیا کی ابھرتی ہوئی طاقت ہے، ایردوان

0 1,168

101 شہروں میں قدرتی گیس کی فراہمی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کہا، "ہم نے انہیں نہ کبھی اجازت دی اور نہ کبھی دیں گے جو جو ہمارے حالات میں فوری طور پر موقع پرستی ڈھونڈتے ہیں خاص طور پر ایجن اور قبرص میں، جہاں وہ اس حقیقت سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کرتے ہیں کہ ہماری سیکورٹی کے خدشات مختلف مقامات سے منسلک ہیں”۔

ہم ایجیئن اور قبرص میں موقع پرست سرگرمیوں کی اجازت نہیں دیں گے

صدر ایردوان نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ وہ متنوعی فراہمی کے ذریعے توانائی کے خطرات کو کم کرنے کے لئے عزم رکھتے ہیں، کہا، "ہم نے انہیں نہ کبھی اجازت دی اور نہ کبھی دیں گے جو جو ہمارے حالات میں فوری طور پر موقع پرستی ڈھونڈتے ہیں خاص طور پر ایجن اور قبرص میں، جہاں وہ اس حقیقت سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کرتے ہیں کہ ہماری سیکورٹی کے خدشات مختلف مقامات سے منسلک ہیں، مجھے امید ہے کہ وہ قبرص آفشور پر ڈرلنگ سرگرمیوں بارے ہمارے موقف سے سبق سیکھ چکے ہوں گے۔”۔

صدر ایردوان نے زور دیا کہ ” یہ ڈرلنگ سرگرمیاں ایک وفد یا ٹیم کی صورت میں ہونا چاہیے اور وہاں سے جو کچھ ملے وہ بھی اسی طرح گروپ کی صورت ہو۔ جنوبی قبرص کو اپنی آبادی کے لحاظ سے اس کا حصہ ملنا چاہیے اور شمالی قبرص کو اس کی آبادی کے مطابق حصہ ملنا چاہیے۔ ہم اس معاملے پر کوئی مفاہمت نہیں کریں گے”۔

ترکی اس خطے اور دنیا کی ابھرتی ہوئی طاقت ہے

صدر ایردوان نے مزید کہا، "”درجہ بندی کرنے والی ایجنسیوں کی حرکتوں کے باوجود جن کا پہلے ہی مقصد ہمیں گرانا ہے۔ بین الاقوامی سرمایہ کار ہر روز ہمارے ملک کا دورہ کرتے ہیں اور نئی سرمایہ کاری پر تبادلہ خیال کرتے ہیں۔ یہ درجہ بندی کرنے والی ایجنسیوں اور عالمی سرمایہ کاروں کے درمیان فرق ہے۔ اور ہمارے کاروباری افراد اور کاروباری ادارے اپنی برآمدات، سرمایہ کاری اور معاہدوں کے ساتھ دنیا بھر میں ہمارے پرچم کو لہرا رہے ہیں۔ ہمارے پیغام ان لوگوں کے لئے واضح ہے جو سوچتے ہیں کہ ترکی اب بھی ویسا ملک ہے جس طرح یہ 15، 20 سال قبل تھا۔ ترکی اب اس کے خطے اور دنیا کی ابھرتی ہوئی طاقت ہے اور اس وقت تک آگے بڑھتا رہے گا جب تک اول درجے پر نہیں پہنچ جاتا”۔

تبصرے
Loading...