نیٹو کو سب اتحادیوں کے خدشات کو ملحوظِ خاطر رکھنا چاہیے، وزیرِ خارجہ

0 73

وزیر خارجہ مولود چاؤش اوغلو نے کہا ہے کہ ترکی بالٹک پلان کے خلاف نہیں لیکن نیٹو کو اِس طرح کام کرنا چاہیے کہ تمام اتحادیوں کے خدشات کم ہوں۔ "جو کچھ بالٹک کے لیے طلب کیا گیا ہے، اسے ترکی کے لیے بھی کرنا چاہیے۔ ”

ترک وزیر خارجہ کا یہ تبصرہ بالٹک ممالک اور پولینڈ کے لیے نیٹو کے دفاعی منصوبے سے انقرہ کے انکار کے بعد سامنے آیا ہے جو اگلے ہفتے لندن میں نیٹو کے 70 ویں اجلاس سے قبل امریکا کی طرف سے ترکی کے حوالے سے دفاعی منصوبے کو رد کرنے کے بعد کیا گیا، جس میں ترکی پیپلز پروٹیکشن یونٹس (YPG) اور PKK کو قومی خطرہ سمجھتا ہے۔

ترک حکام کے مطابق اگر ترکی سے متعلق دفاعی پلان شائع ہوا تو اس کا مطلب ہوگا کہ امریکا دہشت گرد تنظیموں کی حمایت کا قانونی ذمہ دار ہوگا۔

نیٹو دو دفاعی پلانز یعنی منصوبے رکھتا ہے، ایک جو بالٹک ریاستوں اور پولینڈ کے لیے تیار کیا گیا ہے، جس کی درخواست 2014ء میں روس کی جانب سے یوکرین میں کریمیا پر قبضے کے بعد دی گئی تھی۔ دوسرا ترکی نے خود کو جنوب سے درپیش خطرات کے لیے دیا۔ یہ منصوبے نارتھ اٹلانٹک کونسل (NAC) کے توثیق شدہ ہیں اور ہر دو سال بعد تازہ اور شائع کیے جاتے ہیں۔

تبصرے
Loading...