ترکی شام میں کسی ملک کے ساتھ نہیں کھڑا ہے، نائب وزیراعظم ترکی

0 754

سوموار کے روز ترک نائب وزیر اعظم باکر بوزدا نے فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ ترکی شام میں کسی ملک کے ساتھ نہیں کھڑا۔ اس کا موقف ایران، روس اور امریکہ سے مختلف ہے۔

بوزدا کا بیان میکرون کے ردعمل میں آیا ہے جس نے حال ہی میں دعوی کیا تھا کہ ترکی نے کیمیائی حملوں کے ردعمل میں اسد رجیم کے خلاف امریکی میزائل حملے کی حمایت کر کے روس سے "علیحدگی” اختیار کر لی ہے۔

میکرون نے مزید کہا، "ان حملوں کے ساتھ ہم نے روسیوں اور ترکوں کو الگ کر دیا ہے۔ ترکوں نے کیمیائی ہتھیاروں کی مذمت کی”۔

ترک نائب وزیر اعظم نے کہا کہ "ہماری شامی پالیسی کسی ملک کا ساتھ دینا اور کسی کی مخالفت کرنے کی نہیں ہے”۔ مزید کہا کہ ترکی کا مقصد کسی ملک کے ساتھ بھی تعاون کرنا ہے جو شام میں "درست اصولوں” کی حفاظت کے حق میں ہو۔

بجائے کسی واحد اور محدود عمل کو سر انجام دینے کے ترکی نے شام میں فضائی حملوں کی حمایت کی ہے، اور تقریبا تمام پیغامات میں سیاسی حل پر زور دیا۔ جس میں اسد رجیم  کے بغیر شام کا نیا مستقل ترتیب دیا جائے اور شہریوں کے خلاف تشدد پر مضبوط بین الاقوامی عزم پر زور دیا۔

تبصرے
Loading...