اطالوی بچے کی زندگی بچانے کے لیے ترکی نے فضائی حدود کھول دِیں

0 2,997

کرونا وائرس کی عالمگیر وباء کی وجہ سے ترکی کی فضائی حدود بند ہیں، لیکن اس نے استنبول کے اتاترک ایئرپورٹ پر ایک پرائیوٹ جہاز کو اترنے کی اجازت دی کیونکہ یہ ہوائی جہاز ایک خاص مشن پر تھا: ایک بچے کی جان بچانے کے مشن پر۔

14 مارچ کو سربراہ اٹلی نیشنل ٹرانس پلانٹ سینٹر ڈاکٹر ماسیمو کاردیلو نے ایک بیمار بچے کی مدد کے لیے ترک حکام کو ایک ای میل بھیجی۔ اس ای میل میں کہا گیا تھا کہ بین الاقوامی ڈونر بینکوں پر بہت تلاش کرنے کے بعد اسٹیم سیل ٹرانس پلانٹ کے منتظر ایک بچے کا درست ڈونر ترکی میں ملا ہے۔

گو کہ اس وقت ترکی میں COVID-19 کے خطرے کی وجہ سے فضائی حدود بند تھیں، لیکن وزارت صحت اور وزارت خارجہ نے اس بچے کی زندگی بچانے کے لیے اجازت دے دی۔

31 مارچ کو اطالوی فضائیہ کا ایک جیٹ طیارہ روم سے اڑا اور اتاترک ایئرپورٹ پر لینڈنگ کی اجازت طلب کی۔

ایک مخصوص کمرے کی تیاری اور اطالوی ڈاکٹر کے COVID-19 ٹیسٹ کے بعد کہ جو منفی آیا، ترک ڈاکٹروں نے اسٹیم سیلز اطالوی ٹیم کے حوالے کیے کہ جو اسے لے کر روم روانہ ہوگئی جہاں یہ بچے کو لگا بھی دیے گئے ہیں۔

ڈائریکٹر اٹالین بون میرو ڈونر رجسٹری نکولیٹا ساچی نے کہا کہ وہ اس مشکل وقت میں ترکی کی مدد کو کبھی نہیں بھولیں گے۔

کروناوائرس کی عالمگیر وباء گزشتہ سال دسمبر سے اب تک لاکھوں افراد کو نقصان پہنچا چکی ہے جن میں ترکی بھی شامل ہے کہ جس نے اپنی فضائی حدود اور بین الاقوامی اور مقامی دونوں پروازوں کے لیے بند کر رکھا ہے۔

تبصرے
Loading...