ترکی نے خواتین سائنسدانوں اور انجینئر کی شرح میں یورپ کو مات دے دی، یورپی ادارہ شماریات

0 1,059

یوروسٹیٹ کے تازہ اعداد و شمار کے مطابق ریسرچ، ٹیکنالوجی، طب، انجینئرنگ اور ڈویلپمنٹ کے شعبہ جات میں خواتین کے کام کرنے کی شرح میں ترکی نے کئی یورپی ممالک جن میں جرمنی، فرانس اور برطانیہ بھی شامل ہے، مات دے دی ہے۔

2017ء کے تعلیمی اعداد وشمار جو یورپی اور اس کے پارٹنر ممالک بارے یورو سٹیٹ نے جاری کئے ہیں۔ ان کے مطابق ترکی میں خاتون سائنسدانوں اور انجینئرز کی شرح 45 فیصد تھی جبکہ یورپ کی اوسط شرح 41 فیصد ہے۔ ترکی کی یہ شرح جرمنی، فرانس اور برطانیہ سے بھی زیادہ ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق یورپی یونین کے ممبر ممالک میں شائنس اور انجینئرنگ کے شعبوں میں 7.1 ملین خواتین کام کر رہی ہیں۔

پانچ یورپی ممالک میں سائنسدانوں اور انجینئرز میں خواتین کی شرح زیادہ ہے۔۔ لیتھوآنا 57 فیصد، بلگھاریہ اور لاتیوا 53 فیصد، پرتگال 51 فیصد جبکہ ڈینمارک 50 فیصد۔ جبکہ یورپ کی اوسط شرح 41 فیصد ہے۔

تبصرے
Loading...