ترکی شجرکاری کا ریکارڈ توڑ دن منائے گا

0 1,299

وزارت زراعت و جنگلات 11 نومبر کی صبح 11 بجے عوام کو ایک درخت لگانے کی دعوت دے رہی ہے۔

وزارت نے گزشتہ روز اعلان کیا کہ وہ بیک وقت 30 لاکھ درخت لگانے کا عالمی ریکارڈ بنانا چاہتی ہے اوریوں گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈز میں جگہ بنانے کی خواہاں ہے۔ اس سے ملتا جلتا ایک ریکارڈ اس وقت بھارت کے پاس ہے جس نے اس مہینے ریاست اترپردیش میں ایک دن میں 220 ملین درخت لگانے کا ریکارڈ قائم کیا۔ ایتھوپیا نے بھی پچھلے مہینے 220 ملین درخت لگا کر یہی ریکارڈ قائم کیا تھا۔

شجر کاری کی تقاریب ترکی بھر میں بیک وقت ہوگی لیکن ان کی زیادہ توجہ ازمیر اور مغلا پر ہوں گی، دو مغربی شہر کہ جہاں جنگل کی آگ نے سینکڑوں ہیکٹرز کے رقبے پر جنگلات کو تباہ کردیا۔

وزارت نے ایک بیان میں کہا کہ ترکی چین اور بھارت کے بعد دنیا میں تیسرا سب سے بڑا ملک ہے جہاں شجر کاری کی شرح سب سے زیادہ ہے اور وہ 2023ء تک 7 ارب درختوں کے پودے لگانے کا ہدف رکھتا ہے۔

جنگل کی آگ اس موسم میں بڑے پیمانے پر پھیلی ہے لیکن وزارت کہتی ہے کہ وہ اب اس کا مقابلہ کرنے کے لیے زیادہ مؤثر ہیں، اور بتایا کہ آگ لگنے کے بعد رسپانس دکھانے کا وقت 40 منٹ سے گھٹ کر 14 منٹ ہو چکا ہے۔ وزارت کہتی ہے کہ گزشتہ دہائی میں آگ لگنے سے 66,000 ہیکٹرز سے زیادہ رقبہ متاثر ہوا اور ان زمینوں پر 75.4 ملین درخت لگائے گئے تھے۔

حکمران انصاف و ترقی پارٹی (آق پارٹی) کے 2002ء میں پہلی بار برسر اقتدار آنے کے بعد سے اب تک جنگلات 20.8 ملین ہیکٹر سے بڑھ کر 22.6 ملین ہیکٹرز تک پھیل گئے ہیں۔ 16 سالوں میں مختلف مہمات میں 4.5 ارب درخت لگائے گئے۔ گزشتہ سال ملک بھر میں 256 ملین درخت لگائے گئے، وزارت نے بتایا۔

وزارت نے یہ نہیں کہا کہ آیا 11 نومبر کو یومِ شجر کاری قرار دیا گیا ہے یا نہیں۔ گزشتہ ماہ صدر رجب طیب ایردوان نے ایک ٹوئٹر صارف انس شاہین کا جواب دیا تھا کہ جنہوں نے درخت لگانے کے لیے ایک قومی تعطیل کا دن مقرر کرنے کا مشورہ دیا تھا۔

"یہ زبردست آئیڈیا ہے، انس۔ ہم ہمیشہ ایک زیادہ سرسبز ترکی کے لیے کام کرتے ہیں اور کرتے رہیں گے۔ میں اور میرے کئی دوست اس کام کا بیڑا اٹھائیں گے کہ ایک قومی شجر کاری دن کو یقینی بنایا جائے،” صدر نے کہا اور یوں اشارہ کیا کہ ترکی جلد ہی اس کام کے لیے دن مقرر کر سکتا ہے۔

تعمیرات میں اضافے اور عالمی حدت کے خدشات کے سامنے ترکی نے اپنے جنگلات کے تحفظ اور انہیں مزید بڑھانے پر قدم اٹھائے ہیں۔ گزشتہ سال اسکول کے بچوں نے ملک کے 81 صوبوں میں "Saplings Grow With Saplings” مہم کے نام سے شجر کاری کا دن منایا جس کا اہتمام تعلیم اور زراعت و جنگلات کی وزارتوں نے کیا تھا۔

ترکی شجرکاری کے لیے نوعمر درختوں کی پیداوار بڑھانے اور جنگلی مصنوعات، جیسا کہ پھل اور شہد سے دیہی آبادی کی آمدنی بڑھانے کے لیے بھی مہم چلا رہا ہے۔ مختلف دیہات کے حوالے کیے گئے آمدنی حاصل کرنے والے جنگلات کی تعداد اس وقت 3,500 ہے۔

تبصرے
Loading...