ترکی، پولینڈ اور رومانیہ کروناوائرس اور نیٹو معاملات پر سہ فریقی مذاکرات کریں گے

0 221

ترکی، پولینڈ اور رومانیہ کے امورِ خارجہ کے وزراء کا سہ فریقی اجلاس، جو 2016ء سے ہر سال منعقد ہوتا ہے، COVID-19 کی عالمگیر وباء کے خلاف اٹھائے گئے اقدامات کی وجہ سے اِس سال 28 اپریل کو بذریعہ وڈیو کانفرنس ہوگا۔

وزیرِ خارجہ مولود چاؤش اوغلو اس اجلاس میں شرکت کریں گے کہ جس میں COVID-19 کی عالمگیر وباء کے خلاف جنگ کے ساتھ ساتھ نیٹو کے ایجنڈا اور خطے میں ہونے والی تازہ پیش رفت پر گفتگو کی جائے گی۔

سکیورٹی معاملات کے علاوہ نیٹو کے مشرقی حصے میں واقع ممالک، ترکی رومانیہ اور پولینڈ مختلف معاملات پر بھی توجہ کریں گے، جیسا کہ ترکی کے یورپی یونین مذاکرات۔ رومانیہ اور پولینڈ روایتی طور پر ترکی کی یورپی یونین میں شمولیت کے حامی ہیں۔ پچھلے سال سہ فریقی اجلاس انقرہ میں ہوا تھا کہ جس میں دفاعی تعاون کے مختلف شعبوں پر بات کی گئی تھی۔

گزشتہ سال دسمبر میں چین کے شہر ووہان سے برآمد ہونے والا جدید کروناوائرس اب تک 185 ممالک اور خطوں تک پھیل چکا ہے اور تقریباً 30 لاکھ افراد کو متاثر کر چکا ہے۔

تبصرے
Loading...