ترکی ہر مذہب سے تعلق رکھنے والے شہریوں کو عبادت کے ذرائع فراہم کرتا ہے، صدر ایردوان

0 887

استنبول میں لیونت مسجد کے سنگِ بنیاد کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "ترکی کسی بھی مذہب، عقیدے اور مزاج کے اپنے شہریوں کے لیے عبادت کے ذرائع فراہم کرتا ہے۔ اس وقت ہمارے ملک میں تقریبآً 435 گرجے اور یہودی معبد ہیں جو عبادت کے لیے کھلے ہیں۔”

صدر رجب طیب ایردوان نے استنبول میں لیونت مسجد کے سنگِ بنیاد کی تقریب میں شہریوں سے خطاب کیا۔

آیاصوفیہ کے معاملے پر صدر ایردوان نے زور دیا کہ ترکی دوسرے ملکوں کی عبادت گاہوں کے معاملات میں مداخلت نہیں کرتا اس لیے کسی کو ترکی میں کسی عبادت گاہ میں مداخلت کرنے کا حق یا اختیار نہیں۔ انہوں نے کہا کہ "ترکی کسی بھی مذہب، عقیدے اور مزاج کے اپنے شہریوں کے لیے عبادت کے ذرائع فراہم کرتا ہے۔ اس وقت ہمارے ملک میں تقریبآً 435 گرجے اور یہودی معبد ہیں جو عبادت کے لیے کھلے ہیں۔”

صدر ایردوان نے مزید زور دیا کہ "ہمارے ملک کے خلاف آیاصوفیہ کے حوالے سے لگائے گئے الزامات ہماری خودمختارانہ حقوق پر براہِ راست حملہ ہیں۔ البتہ ہم ایک ایسے دور سے گزر رہے ہیں جس میں دنیا بھر میں مساجد اور دیگر مذاہب سے تعلق رکھنے والے افراد کی عبادت گاہیں حملوں کی زد میں ہیں۔ لاکھوں افراد صرف اپنے مذہبی عقائد کی وجہ سے تمام اقسام کے دباؤ کی زد میں ہیں کہ جن میں زندگی کو درپیش خطرات تک شامل ہیں۔ اس پر سوچنے کی ضرورت ہے اور اس کے خلاف لازماً اقدامات اٹھانے چاہئيں۔

تبصرے
Loading...