دولت لُٹانے اور طاقت کے استعمال سے مہاجرین کا بحران حل نہیں ہو سکتا، ترکی نے یورپ کو بتا دیا

0 273

صدارتی رابطہ ڈائریکٹر فخر الدین آلتن نے یورپ کو خبردار کیا ہے کہ دولت لُٹانے یا طاقت کے استعمال سے مہاجرین کا بحران ٹلنے والا نہیں، کیونکہ یونانی حکام مہاجرین کو یورپ پہنچنے سے روک رہے ہیں۔آلتن نے ٹوئٹر پر دیے گئے ایک پیغام میں کہا ہے کہ "مہاجرین کا بحران ختم ہونے والا نہیں۔ یورپی یونین اس مسئلے کو محض دولت لٹا کر یا بے جا طاقت کے استعمال کے ذریعے حل نہیں کر سکتی – جیسا کہ حال ہی میں یونان نے کیا ہے۔”

انہوں نے تجویز کیا کہ بحران تبھی حل ہوگا جب یورپ ترکی کے ساتھ مل کر منطقی اقدامات اٹھائے گا۔

مہاجرین کا کہنا ہے کہ یونانی بارڈر فورس ہتھیاروں کے ذریعے انہیں نشانہ بنا رہی ہے اور سرحد پار کرنے کے بعد انہیں زبردستی واپس ترکی میں دھکیل رہی ہے۔

انقرہ نے حال ہی میں اعلان کیا تھا کہ وہ اب یورپ میں سیاسی پناہ کے خواہش مندوں کو یورپ جانے سے نہیں روکے گا۔

اس اعلان کے ساتھ ہی ہزاروں افراد یونان اور بلغاریہ سے ملحق ترکی صوبے ادرنہ سے یورپ جا رہے ہیں۔

اس اعلان پر یونان کا ردعمل سخت ہے جس نے ان مہاجرین کو زد و کوب کیا، ان پر آنسو گیس پھینکی جس کے نتیجے میں متعدد افراد اپنی جان سے بھی ہاتھ دھو بیٹھے۔

ترکی دنیا کے کسی بھی ملک سے زیادہ مہاجرین رکھتا ہے کہ جن کی تعداد تقریباً 40 لاکھ ہے، یہی وجہ ہے کہ اُس کا کہنا ہے کہ وہ اب مزید مہاجرین کو نہیں سنبھال سکتا۔

تبصرے
Loading...