پاک بھارت تناؤ کم کرنے کے لیے ترکی جو بھی ضروری ہوا کرے گا، ایردوان

0 845

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ "پاک بھارت تناؤ میں ترکی جو بھی ضروری ہوا کرے گا”۔ مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی فوج پر کشمیری نوجوان کے خود کش حملے کے بعد پاکستان اور بھارت کے درمیان تناؤ بڑھ رہا تھا۔ انہوں نے کہا، "پاکستان کی طرف سے گرفتار کر لیے جانے والے بھارتی پائلٹ کی رہائی، ایک احسن قدم ہے جسے سراہا جانا چاہیے۔ ہم امید کرتے ہیں کہ ہمارے بھارتی دوست بھی اسی طرح کا انداز اپنائیں گے”.

رجب طیب ایردوان یہ بات بھارتی ونگ کمانڈر ابھی نندن کے حوالے سے بات کر رہے تھے جسے جمعہ کے دن بھارت کو واپس کر دیا گیا تھا۔ ابھی نندن مگ فائٹر کے ساتھ پاکستانی حدود کو کراس کر کے پاکستان میں حملے کی غرض سے آئے جنہیں پاکستان کی جانب سے گرا دیا تھا اور پائلٹ کو گرفتار کیا گیا۔ گذشتہ دو دنوں سے ان کی رہائی دو ایٹمی قوتوں کے درمیان خیر سگالی کی علامت بنی ہوئی ہے۔

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے مزید کہا کہ انہوں نے پاکستانی صدر عارف علوی اور وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے اس حوالے سے بات کی ہے اور تناؤ میں کمی کے لیے تبادلہ خیال کیا ہے۔

اس موقع پر ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کہا کہ پاکستان اور ترکی کے درمیان مضبوط تعلقات کی جڑیں (جنگ عظیم اول کے وقت)  ہند و پاک کے مسلمانوں کی اتحادی افواج اور یونان کے مقابلے میں ترکی کو دی گئی امداد میں پیوست ہیں جو خود اس وقت برصغیر میں برطانوی ریاست کے ماتحت زندگی گزار رہے تھے۔

 

تبصرے
Loading...