ترکی کے گذشتہ شب بشار الاسد کے ٹھکانوں پر مزید حملے، جہنم واصل ہونے والے ظالموں کی تعداد 2100 ہو گئی

0 3,378

ترک وزارت دفاع کی تازہ پریس ریلیز کے مطابق ترکی بشار الاسد کے مزید اہداف کو نشانہ بنانا جاری رکھے ہوئے ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ بشار الاسد کے مرنے والوں فوجیوں کی تعداد 2100 ہو گئی ہے

وزارت نے مزید وضاحت کی ہے کہ یہ ہلاکتیں، شام کے شمال مغربی صوبے ادلب میں ہوئی ہیں

بشارالاسد حکومت کی حمایت کرنے والے کچھ سوشل میڈیا اکاؤنٹس نے دعویٰ کیا ہے کہ ادلب میں ہلاک ہونے والوں میں حکومت کے دو اہم جرنیل بھی شامل ہیں۔

ایرانی خبر رساں ایجنسی حوزہ نیوز کے مطابق ، اس کے علاوہ، ادلب میں کم از کم 21 ایرانی حمایت یافتہ دہشت گردوں بھی ہلاک ہو گئے ہیں۔

شام کے شہر ادلب میں جمعرات کی شام بشار الاسد فورسز کے فضائی حملے میں کم از کم 34 ترک فوجی شہید اور دسیوں دیگر زخمی ہوگئے۔

ترک فوجی روس کے ساتھ ستمبر 2018 میں ہونے والے ایک معاہدے کے تحت مقامی شہریوں کی حفاظت کے لئے کام کر رہے ہیں ، جو ادلب کے امن زون میں جارحیت کی کاروائیوں پر پابندی عائد کرتا ہے۔

ترک فوجیوں پر ہونے والا اس معاہدہ کو توڑتے ہوئے بشار الاسد کی طرف سے شامی اپوزیشن سے ادلب پر قبضہ کرنے کی فوج کشی کے دوران پیش آیا جس کے سامنے عام شامی عوام پر حملے اور انہیں ہجرت پر مجبور کرنے سے روکنے کے لیے ترک فوج مزاحم ہے

تبصرے
Loading...