مغربی کنارے پر اسرائیلی قبضے کے خلاف بین الاقوامی کارروائی کی جائے، ترکی کا مطالبہ

0 184

ترکی کے صدارتی ترجمان نے بین الاقوامی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مغربی کنارے پر قبضہ جمانے کے اسرائیلی منصوبے کے خلاف اٹھ کھڑی ہو۔

ابراہیم قالن نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ "ہم مغربی کنارے پر قبضہ کرنے کے اسرائیلی منصوبے کو مسترد کرتے ہیں اور دنیا سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اس کے خلاف اٹھ کھڑی ہے۔ قبضے کرنا ایک جرم ہے۔”

قالن نے کہا کہ ترکی فلسطینی سرزمین پر قبضے کے خلاف تمام کوششوں کی مدد کرے گا۔

اسرائیل یکم جولائی سے قبضے کے عمل کا آغاز کرے گا جیسا کہ وزیر اعظم بن یامین نیتن یاہو اور بلو اینڈ وائٹ پارٹی کے سربراہ بینی گانٹز کے مابین طے پایا ہے۔

یہ منصوبہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے نام نہاد "ڈیل آف دی سنچری” منصوبے کے حصے کے طور پر آتا ہے جس کا اعلان 28 جنوری کو کیا گیا تھا۔ یہ منصوبہ یروشلم کو "اسرائیل کا غیر منقسم دارالحکومت” قرار دیتا ہے اور مغربی کنارے کے بڑے حصے پر اسرائیل کی بالادستی تسلیم کرتا ہے۔

منصوبہ کسی جزائر کے مجموعے کی صورت میں ایک فلسطینی ریاست کے قیام کا مطالبہ کرتا ہے کہ جو پلوں اور سرنگوں سے باہم ملی ہوئی ہو۔

فلسطینی عہدیداروں کا کہنا ہے کہ امریکی منصوبے کے تحت اسرائیل مغربی کنارے کے 30 سے 40 فیصد حصے پر قابض ہو جائے گا کہ جس میں مشرقی یروشلم بھی شامل ہے۔

تبصرے
Loading...