یتیموں اور نادار بچوں کے لیے ترکی میں پہلی بار ایک بڑا یونٹ قائم کیا جائے گا، ترک وزیر برائے خاندانی و سماجی خدمات

0 4,069

ترک وزیر برائے خاندانی و سماجی خدمات زہرا زمرت سیلچوک نے کہا ہے کہ یتیموں اور نادار بچوں کو بہتر معیار کی خدمات فراہم کرنے کے لئے عمومی نظامت اطفال کے تحت ایک نیا یونٹ قائم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ، "یہ یونٹ پہلی بار ترکی میں لگایا جائے گا، یہ نہ صرف ہمارے اداروں کے تحت قیام پذیر ہمارے تمام یتیموں اور نادار بچوں کی دیکھ بھال کرے گا بلکہ اس کے علاوہ ملک میں موجود ایسے تمام اداروں میں موجود اور غیر موجود تمام یتیموں کے لیے خدمات سرانجام دے گا”۔

سیلچوک نے بتایا کہ ملک میں 25 ملین بچے ہیں جن میں سے 359 ہزار 797 بچے یتیم ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا ایسے بچوں کی بھی ایک بڑی تعداد ہے جو ہر سال قدرتی آفات، جنگ، ٹریفک حادثات اور بیماریوں جیسی وجوہات کی وجہ سے اپنے والدین سے محروم ہوجاتے ہیں۔

وزیر نے مزید کہا، "ہمارے ملک میں یتیموں اور نادار بچوں میں سے 78 ہزار 412 براہ راست سماجی خدمات اور ہماری وزارت کی سماجی پروگرام سے فائدہ اٹھاتے ہیں۔ جب کہ سپورٹ سروس (ایس آئی اے) سے مستفید ہونے والوں کی تعداد 144 ہزار 262 ہے، اس خدمت میں شامل بچوں میں سے 14 ہزار 923 بچے یتیم ہیں۔ ہم اپنے ہر یتیم بچے کے لئے اوسطا 1023 لیرا ادا کرتے ہیں۔

تبصرے
Loading...